اشیائے ضروریہ کی قیمتیں اعتدال سے باہر ،سحری اور افطار کا اہتمام مشکل ہونے لگا

 سرینگر //ناجائز منافع خوری اور عام صارفین سے اضافی قیمتوں کی وصولی کی شکایت کے بیچ محکمہ عوامی تقسیم کاری وامورصارفین نے اس بات کا دعویٰ کیا ہے کہ اپریل سے اب تکناجائزمنافع خوروں سے 8لاکھ کا جرمانہ وصول کیا گیا ہے اور گوشت کی قیمتوں کواز خود بڑھانے والے قصابوں کے خلاف بھی کارروائی عمل میں لائی گئی ہے۔ وادی میں امسال رمضان المبارک کے آتے ہی مہنگائی کاطوفان امڈ آیا ہے۔ناجائز منافع خور،گران فروش اور ذخیرہ اندوز عوام کو دودو ہاتھوں سے لوٹتے رہے ہیں ۔ عوام جہاں پہلے ہی مہنگائی کے بوجھ تلے دبی ہوئی ہے اور ا س پر مزید اشیاء خوردونوش کی قیمتوں اضافے سے سحری اور افطار کا اہتمام بھی مشکل ہو گیا ہے۔محکمہ امور صورفین کی جانب سے ماہ رمضان میں عام صارفین کو قیمتوں میں رعایت دینے کی خاطر پچھلے 10 روز میں کئی بار سرکاری نرخ نامے جاری کئے گے تاہم اُس کے باوجود بھی بازاروں میں مہنگائی کا جن بے ق

تازہ ترین