تازہ ترین

اننت ناگ ضلع میں لوک سبھا پولنگ13.61فیصد پر ختم

سرینگر/جنوبی ضلع اننت ناگ میں منگل کو ہونے والے لوک سبھا انتخابات کے دوران مجموعی طور13.61فیصد ووٹنگ ریکارڈ ہوئی۔ چیف الیکٹورل آفیسر جموں کشمیر، شیلندر کمار نے نامہ نگاروں کو بتایا کہ اننت ناگ ضلع میں ووٹنگ کی شرح فیصد13.61رہی۔ اس ضلع میں آج صبح سات بجے سے دن کے چار بجے تک ووٹ ڈالے گئے۔ ووٹنگ کیلئے ضلع بھر میں حفاظت کے سخت انتظامات کئے گئے تھے۔ ضلع چھ اسمبلی حلقوں پر مشتمل ہے جن میں اننت ناگ، بجبہارہ،پہلگام،شانگس، ککرناگ اور ڈورو شامل ہیں۔ اعداد و شمار کے مطابق اننت ناگ حلقے میں3.47فیصد،ڈورو میں17.28فیصد،ککر ناگ میں19.36فیصد،شانگس میں15.09،بجبہارہ میں2.04فیصد جبکہ پہلگام میں20.37فیصد ووٹنگ ریکارڈ کی گئی۔ اننت ناگ لوک سبھا نشست کیلئے جو سرکردہ اُمیدوار میدان میں ہیں اُن میں پی ڈی پی کی محبوبہ مفتی، کانگریس کے غلام احمد میر، نیشنل کانفرنس کے حسنین مسعودی،بھاجپا کے

پی ڈی پی کو اننت ناگ میں شکست کا احساس ہوگیا ہے: عمر عبد اللہ

سرینگر/جنوبی کشمیر کے بجبہارہ میں نیشنل کانفرنس کارکنان کی مبینہ پٹائی پر رد عمل ظاہر کرتے ہوئے نیشنل کانفرنس کے نائب صدر عمر عبد اللہ نے منگل کو کہا کہ پیپلز ڈیمو کریٹک پارٹی (پی ڈی پی) کو اننت ناگ میں اپنی شکست صاف دکھائی دے رہی ہے۔ عمر نے ایک ٹویٹ میں لکھا'' اُنہیں اپنی شکست صاف دکھائی دے  رہی ہے۔وہ لوگوں کی مار پیٹ کرسکتے ہیں لیکن اُس سے اُن کی تقدیر بدل نہیں سکتی ہے''۔ اس سے قبل سوشل میڈیا پر ایک ویڈیو وائرل ہوگئی جس میں بجبہارہ حلقے میں قائم ایک پولنگ سٹیشن پر مبینہ طور ایک نیشنل کانفرنس کارکن کو پی ڈی پی کارکنان پیٹتے ہوئے نظر آرہے ہیں۔ پی ڈی پی صدر محبوبہ مفتی کے آبائی حلقہ بجبہارہ میں آج ہونے والی لوک سبھا پولنگ کے دوران بہت ہی کم،دو فیصد ووٹنگ ریکارڈ ہوئی۔  

لوک سبھا پولنگ: ضلع اننت ناگ میں تین بجے تک11.22فیصد ووٹنگ، بجبہارہ میں سب سے کم1.7فیصد ریکارڈ

سرینگر/جنوبی ضلع اننت ناگ، جہاں منگل کو لوک سبھا انتخابات کے تیسرے مرحلے کے سلسلے میں ووٹ ڈالے جارہےہیں، میں دن کے تین بجے تک مجموعی طور 11.22فیصد پولنگ درج کی گئی۔ اعداد و شمار کے مطابق اننت ناگ حلقے میں دن کے تین بجے تک  2.9فیصد،ڈورو میں16.9فیصد،ککرناگ میں17.3فیصد،شانگس میں13.3فیصد،بجبہارہ میں1.7فیصد اور پہلگام حلقے میں18.6فیصد ووٹ ڈالے گئے تھے۔ واضح رہے کہ جنوبی کشمیر کی لوک سبھا نشست پر تین مرحلوں میں ووٹ ڈالے جارہے ہیں اور آج پہلے مرحلے میں اننت ضلع کے اندر پولنگ ہورہی ہے۔ سرکاری ذرائع نے کہا کہ ضلع میں دن کے ایک بجے تک مجموعی طور پر9.7فیصد رائے دہندگان نے اپنی رائے کا اظہار کیا تھا۔  

لوک سبھا پولنگ: ضلع اننت ناگ میں1بجے تک9.7 فیصد ووٹنگ ریکارڈ

سرینگر/جنوبی ضلع اننت ناگ، جہاں منگل کو لوک سبھا انتخابات کے تیسرے مرحلے کے سلسلے میں ووٹ ڈالے جارہے ہیں، میں دن کے ایک بجے تک  9.7فیصد پولنگ درج کی گئی۔ واضح رہے کہ جنوبی کشمیر کی لوک سبھا نشست پر تین مرحلوں میں ووٹ ڈالے جارہے ہیں اور آج پہلے مرحلے میں اننت  ناگ ضلع کے اندر پولنگ ہورہی ہے۔ سرکاری ذرائع نے کہا کہ ضلع میں دن کے ایک بجے تک مجموعی طور پر9.7فیصد رائے دہندگان نے اپنی رائے کا اظہار کیا تھا۔ مذکورہ ذرائع کے مطابق ضلع کے پہلگام ،ککرناگ اور شانگس حلقوں میں سب سے زیادہ ووٹنگ ہورہی تھی۔  

وادی میں علیحدگی پسندوں کی اپیل پر ہڑتال سے معمولات متاثر

سرینگر/منگل کو وادی کشمیر میں علیحدگی پسندوں کی احتجاجی ہڑتال کی وجہ سے روز مرہ کے معمولات متاثر ہوئے۔ یہ ہڑتال لبریشن فرنٹ چیئر مین محمد یاسین ملک کے ساتھ دورانِ حراست مبینہ طور ناروا سلوک کیخلاف احتجاج کے طور کی جارہی ہے۔ سرینگر کے لالچوک اور دیگر ضلع صدر مقامات پر دکان بند ہیں جبکہ پبلک ٹرانسپورٹ بھی کسی حد تک متاثر ہے تاہم پرائیویٹ گاڑیاں کافی تعداد میں چل رہی ہیں۔ ہڑتال کی اپیل علیحدگی پسندوں کے وفاق، مشترکہ مزاحمتی قیادت نے دی تھی۔  

لوک سبھا پولنگ: اننت ناگ ضلع میں11بجے تک4.79 فیصد ووٹنگ ریکارڈ

سرینگر/جنوبی ضلع اننت ناگ، جہاں منگل کو لوک سبھا انتخابات کے سلسلے میں ووٹ ڈالے جارہیں، میں صبح گیارہ بجے تک کی پولنگ کے دوران 4.79فیصد پولنگ درج کی گئی۔ واضح رہے کہ جنوبی کشمیر کی لوک سبھا نشست پر تین مرحلوں میں ووٹ ڈالے جارہے ہیں اور آج پہلے مرحلے میں اننت ضلع کے اندر پولنگ ہورہی ہے۔ ذرائع کے مطابق صبح سات بجے شروع ہونے والی ووٹنگ میں پہلے دوگھنٹوں کے دوران ر ائے دہندگان کی انتہائی کم تعداد نے پولنگ مراکز پر آکر اپنے ووٹ کا استعمال کیا تاہم بعد میں کئی پولنگ مراکز پر رائے دہندگان کی اچھی تعداد کو  دیکھا  گیا۔ مذکورہ ذرائع کے مطابق ابھی تک پہلگام حلقے میں سب سے زیادہ ووٹنگ شرح ریکارڈ کی گئی تھی جس کے بعد ڈورو حلقے کا نمبر تھا۔  

لوک سبھا پولنگ: اننت ناگ ضلع میں نوبجے تک محض1.55 فیصد ووٹنگ درج

سرینگر/جنوبی ضلع اننت ناگ، جہاں منگل کو لوک سبھا انتخابات کے سلسلے میں ووٹ ڈالے جارہیں، میں پہلے دو گھنٹوں کی پولنگ کے دوران 1.55فیصد پولنگ درج کی گئی۔ واضح رہے کہ جنوبی کشمیر کی لوک سبھا نشست پر تین مرحلوں میں ووٹ ڈالے جارہے ہیں اور آج پہلے مرحلے میں اننت ضلع کے اندر پولنگ ہورہی ہے۔ سرکاری اعداد و شمار کے مطابق صبح سات بجے شروع ہونے والی ووٹنگ میں پہلے دو گھنٹوں کے دوران ر ائے دہندگان کی انتہائی کم تعداد نے پولنگ مراکز پر آکر اپنے ووٹ کا استعمال کیا۔  

مینڈھر میں دو افراد بجلی کرنٹ لگنے سے لقمہ اجل

سرینگر/پیر پنچال کے مینڈھر علاقے میں منگل کو دو افراد بجلی کا کرنٹ لگنے سے لقمہ اجل بن گئے۔ یہ واقعہ ضلع کے چنگا چارن نامی گائوں میں پیش آیا۔ مرنے والوں کی شناخت چالیس سالہ فیض احمد ولد محمد شریف اور اڑتیس سالہ محمدشبیر ولد عبد الرحیم کے طور ہوئی ہے۔ اطلاعات کے مطابق دونوں کی موت بجلی کی ترسیلی لائن کے ساتھ رابطہ ہونے سے ہوئی۔ اطلاعات میں بتایا گیا ہے کہ یہ حادثہ رات کے تین بجے پیش آیا جب گائوں کے ٹرانسفارمر میں کوئی خرابی پیش آگئی۔  

اننت ناگ ضلع میں لوک سبھا پولنگ کے تیسرے مرحلے کے تحت ووٹنگ جاری

سرینگر/سخت ترین حفاظتی بند و بست کے بیچ جنوبی کشمیر کے اننت ناگ ضلع میں منگل کو لوک سبھا انتخابات کے تیسرے مرحلے کے تحت ووٹنگ کا سلسلہ جاری ہے۔ اننت ناگ میں ووٹ ڈالنے کا آغاز صبح سات بجے ہوا جو شام چار بجے تک جاری رہے گا۔ اننت ناگ ضلع میں پُر امن ووٹنگ کیلئے حکام کے مطابق سینٹرل آرمڈ پولیس فورس (سی اے پی ایف)، سی آپی ایف اور پولیس اہلکاروںکی اضافی تعیناتی عمل میں لائی گئی ہے۔ ضلع بھر میں حکام کے مطابق موبائیل انٹرنیٹ سروس ''احتیاطی طور'' معطل کی گئی ہے۔ ضلع کے5,23,566ووٹران کو آج اپنی رائے کا اظہار کرنا ہے جس کیلئے714پولنگ سٹیشن قائم کئے گئے ہیں تاہم ابتدائی اطلاعات میں کہا گیا ہے کہ رائے دہندگان کی کافی کم تعداد پولنگ سٹیشنوں پر پہنچی ہے۔ حکام کو تاہم توقع ہے کہ دن گذرنے کے ساتھ ساتھ پولنگ سٹیشنوں پر رائے دہندگان کی تعداد میں اضافہ ہوگا۔ سرکاری