تازہ ترین

جموں میں درماندہ کشمیریوں پر طالب علموں کی سنگباری، سوشل میڈیا پرویڈیو وایئرل

سرینگر/سرینگر۔جموں شاہراہ مسلسل بند رہنے کے نتیجے میں اوقاف بلڈنگ جموں میں پناہ گزین درماندہ کشمیری مسافروں پر ایک نزدیکی کالیج کے طالب علموں نے پتھروں سے حملہ کیا۔یہ واقعہ اتوار کو پیش آیا ہے اوراس سلسلے میں ایک ویڈیو سوشل میڈیا پر وایئرل ہوئی ہے جس میں کشمیری درماندہ مسافروں کو اپنی جان بچاتے ہوئے اُدھرادھر بھاگتے ہوئے دیکھا جاسکتا ہے۔   اڑھائی منٹ لمبی اس ویڈیو میں کشمیری مسافروں کو ایک دوسرے کو طالب علموں کی طرف سے سنگباری سے بچنے کی صلاح دیتے ہوئے بھی سنا جاسکتا ہے۔  ویڈیو میں دیکھا جاسکتا ہے کہ کیسے کشمیری مسافر اپنے ایک ساتھی کے ہاتھ سے پتھر لے رہے ہیں جو سنگباری کررہے طالب علموں پر ایک واپسی پتھر پھینکنے کی کوشش کررہا تھا۔ ویڈیو میں ایک کشمیری خاتون، جس کی گود میں ایک بچہ بھی ہے، ڈر کے مارے بیہوش ہوتے ہوئے بھی دیکھا جاسکتا ہے۔ اس صورتحال میں بعض ک

پی ڈی پی رکن پارلیمان کا مودی کے نام خط، مقبول اور افضل کی باقیات لوٹانے کا مطالبہ

سرینگر/پیپلز ڈیمو کریٹک پارٹی (پی ڈی پی) کے رکن پارلیمان محمد فیاض میر نے سوموار کو وزیر اعظم نریندرمودوی کے نام ایک خط لکھ کر لبریشن فرنٹ بانی مرحوم محمد مقبول بٹ اور پارلیمنٹ حملے میں ملوث قرار دئے گئے مرحوم محمد افضل گورو کی باقیات اُن کے گھروالوں کو لوٹانے کا مطالبہ کیا ۔ مقبول کو 11فروری1984کو جبکہ افضل کو 9فروری2013کو دلی کے تہار جیل میں تختہ دار پر لٹکانے کے بعد جیل احاطے میں ہی دفن کیا گیا تھا۔ فیاض نے مودی کے نام خط میں لکھا ہے''ایک ایسے ملک میں جہاں ایک وزیر اعظم کے قاتلوں پر رحم کرکے اُن کی سزائے موت کو کم کیا گیا،دو کشمیریوںکی باقیات اُن کے گھروالوں کو سونپنا میرے خیال میں کوئی غلط بات نہیں ہے''۔ انہوں نے مزید لکھا'' مجھے سمجھ نہیں آتا کہ دو کشمیری، جنہیں تختہ دار پر لٹکایا گیا ہے، کیسے بھارت کی جمہوریت کیلئے خطرناک ہوسکتے ہیں؟''

فوج کشمیر شاہراہ پر درماندہ مسافروں کو ایئر لفٹ کرے گی: سیتھا رمن

سرینگر/جموں کشمیر کی سابق وزیر اعلیٰ محبوبہ مفتی کی فون کال کے جواب میں مرکزی وزیر دفاع نرملا سیتھا رمن نے سوموار کو کہا کہ فوج سرینگر ۔جموں شاہراہ پر درماندہ سواریوں کو ایئر لفٹ کرے گی۔ وزیر دفاع نے کہا کہ فوج عام لوگوں کے ساتھ ساتھ اُن طالب علموں کو بھی ایئر لفٹ کرے گی جو جموں سے سرینگر اور سرینگر سے جموں کی طرف سفر کرتے ہوئے درماندہ ہوگئے ہیں۔ وزیر دفاع نے اپنی ایک ٹویٹ میں لکھا'' فوج درماندہ طالب علموں اور دیگر لوگوں کو ایئر لفٹ کرے گی جو سرینگر یا جموں سے سفرکرتے ہوئے شاہراہ پر درماندہ ہوئے ہیں ۔ اس سلسلے میں  محبوبہ مفتی کی فون کال کا جواب۔'' اس سے قبل محبوبہ نے اپنی ایک ٹویٹ میں لکھا تھا کہ انہوں نے وزیر دفاع سیتھا رمن کے ساتھ بات کرتے ہوئے فوج کے ذریعے درماندہ مسافروں کو ایئر لفٹ کرانے کا مطالبہ کیا ہے۔انہوں نے کہا تھا کہ وزیر موصوفہ نے اُنہیں ی

حکومت جموں کشمیر کی طرف سے عدالت عظمیٰ کے سامنے دفعہ 35اے کیس کی شنوائی التواء میں ڈالنے کی درخواست

سرینگر/جموں کشمیر حکومت نے سوموار کو آئین کے دفعہ35اے کیخلاف کیس کی شنوائی کو التواء میں ڈالنے کیلئے عدالت عظمیٰ سے رجوع کیا۔ اس حساس کیس کی شنوائی12اور14فروری کے درمیان مقرر کی گئی ہے۔ جموں کشمیر کے سٹینڈنگ کونسل ایم شعیب عالم نے التواء کی درخواست عدالت عظمیٰ کے رجسٹرار جنرل کو پیش کردی ہے۔ عالم نے اپنی درخواست میں لکھا ہے کہ ریاست میں اس وقت منتخب سرکار نہیں ہے اور جموں کشمیر پرصدر راج نافذ ہے اس لئے موجودہ وقت اس حساس کیس کی شنوائی کیلئے موزون نہیں ہے۔ انہوں نے درخواست میں لکھا ہے کہ اس بنیاد پر مذکورہ کیس کی شنوائی جموں کشمیر میں  منتخب سرکار کے قیام تک ملتوی کی جانی چاہئے۔  آئین کی دفعہ 35 اے جموں کشمیر کے عوام کی خصوصی شہریت سے متعلق ہے۔ اس دفعہ کو آئین سے حذف کرنے یا اس میں ترمیم کرنے کے حق میں عدالت عظمیٰ کے سامنے متعدد درخواستیں پڑی ہیں جن کی

کرناہ میں تیندوے نے20بھیڑ وں کو چیئر پھاڑ کر کے رکھا

سرینگر /سرحدی تحصیل کرناہ کے جاڈہ گائوں میں گذشتہ رات تیندوے نے ایک مقامی شہری کے شیڈ میں گھس کر کم سے کم 20بھیڑوں کو چیئر پھاڑ کر کے رکھ دیا۔ ذرائع کے مطابق یہ بھیڑ محمد یوسف پوسوال نامی شہری کے تھے۔ انہوں نے کہا کہ پوسوال کے شیڈ میںکم و بیش50بھیڑ تھے جب یہ واقعہ پیش آیا تاہم ڈرے بھیڑبکریوں کے شور و غل سے تیندوا 20کو  لقمہ اجل بناکر بھاگ گیا۔ مقامی ذرائع کے مطابق بھیڑ بکریوں کے شور سے جاگے گائوں کے لوگ جب شیڈ کے قریب پہنچے تو تیندوا وہاں سے فرار ہوگیا ۔ انہوں نے کہا کہ تاہم تیندے نے بھاگنے سے قبل پوسوال کو لاکھوںروپے کے نقصان سے دوچار کیا۔ جاڈہ گائوں جو کنڈی سے 5کلو میٹر دور،پہاڑی پر آباد ہے ،میں اس وقت 2فٹ کے قریب برف جمع ہے ۔ یہاں مقامی ذرائع کے مطابق جنگلی جانوروں نے خوف ودہشت کا ماحول پیدا کر رکھا ہے ۔  

سرینگر میں علیحدگی پسندوں کی ریلی پولیس کے ہاتھوں ناکام، کئی کارکن گرفتار

سرینگر/پولیس نے سرینگر میں سوموار کو علیحدگی پسندوں کی ایک ریلی کو ناکام بناتے ہوئے متعدد کارکنان کی گرفتاری عمل میں لائی۔ اس احتجاجی ریلی کا اہتمام علیحدگی پسندلیڈروں کے وفاق، مشترکہ مزاحمتی قیادت نے لبریشن فرنٹ کے بانی محمد مقبول بٹ کی 35ویں  برسی کے موقع پر مرحوم کی باقیات لوٹانے کے حق میں کیا تھا۔ درجنوں کارکنان شہر کے مائسمہ علاقے میں جمع ہوئے جنہوں نے مرحوم مقبول بٹ اور مرحوم افضل گورو کی باقیات لوٹانے کے حق میں نعرے بازی کرتے ہوئے مارچ کیا۔ عینی شاہدین کے مطابق علاقے میں تعینات پولیس و فورسز اہلکار وں نے احتجاج کرنے والوں کا رستہ روک کر اُنہیں آگے بڑھنے کی اجازت نہیں دی اور متعدد کی گرفتاری عمل میں لاکر مارچ کو ناکام بنایا۔  ضلع کپوارہ کے ترہگام نامی گائوں کے رہنے والے، مقبول بٹ اور تارزو سوپور کے رہنے والے افضل گورو کو دلی کے تہار جیل میں 11فروری1984او

مقبول بٹ کی35ویں برسی پروادی کشمیر میں ہڑتال

سرینگر/جموں کشمیر لبریشن فرنٹ کے بانی محمد مقبول بٹ کی35ویں برسی پر سوموار کو وادی کشمیر میں مکمل ہڑتال رہی۔ وادی کے اطراف و اکناف میں دکان اور کاروباری ادارے بند رہے جبکہ پبلک ٹرانسورٹ بھی سڑکوں سے غائب ہے تاہم پرائیویٹ گاڑیوں کی آوا جاہی جاری رہی۔  ذرائع کے مطابق سرکاری دفاتر میں ملازمین کی حاضری بھی متاثر رہی ۔ ضلع کپوارہ کے ترہگام نامی گائوں کے رہنے والے، مقبول بٹ کو دلی کی تہار جیل میں آج ہی کے دن1984میں تختہ دار پر لٹکایا گیا۔ اُنہیں بعد میں جیل احاطے میں ہی دفن کیا گیا۔ آج کے ہڑتال کی اپیل سید علی گیلانی، میرواعظ عمر فاروق اور محمد یاسین ملک پر مشتمل علیحدگی پسندوں کے وفاق مشترکہ مزاحمتی قیادت نے کی تھی۔ مذکورہ وفاق کا مطالبہ ہے کہ مرحوم کی باقیات اُن کے گھروالوں کو سونپ دی جائیں۔  

پونچھ میں کنٹرول لائن پر ہند۔پاک افواج کے مابین گولیوں کا تبادلہ

سرینگر/پانچ دن کی خاموشی کے بعد بھارت اور پاکستان کی افواج نے سوموار کو ضلع پونچھ میں کنٹرول لائن پر گولیوں کا تبادلہ کیا۔ حکام کے مطابق دونوں ممالک کی افواج نے پونچھ کے کیرنی علاقے میں ایک دوسرے کے ٹھکانوں کوچھوٹے ہتھیاروں سے نشانہ بنایا۔ انہوں نے مزید کہا کہ یہ واقعہ صبح ساڑھے دس بجے کے آس پاس پیش آیا جس کے بعد آخری اطلاعات ملنے تک طرفین کے درمیان وقفے وقفے سے گولیاں چل رہی تھیں۔  

اوڑی میں فوجی کیمپ کے نزدیک سنتری نے مشتبہ حرکت دیکھ کر گولی چلائی

سرینگر/پولیس نے سوموار کو کہا کہ شمالی کشمیر کے اوڑی میں ایک فوجی کیمپ کے نزدیک مشتبہ حرکت دیکھ کر سنتری نے گولی چلائی۔ یہ واقعہ گذشتہ شب راجرونی اوڑی میں قائم فوجی کیمپ کے باہر پیش آیا جس کے بعد علاقے کو گھیرے میں لیکر تلاشی آپریشن شروع کیا گیا۔ پولیس کے مطابق نزدیکی نالہ کے نزدیک دو مشتبہ افراد کو دیکھا گیا ہے جن کے بارے میں چھان بین کی جارہی ہے۔ تاہم پولیس کے مطابق کیمپ پر کوئی حملہ نہیں ہوا ہے اور نہ مخالف سمت سے کوئی گولی چلی ہے۔  

سرینگر ۔جموں شاہراہ مسلسل چھٹے روز بند، وادی میں بحرانی صورتحال پیدا

سرینگر/حالیہ بھاری برفباری کے بعد سرینگر۔ جموں شاہراہ سوموار کو مسلسل چھٹے روز بند رہی جبکہ وادی میں ضروری اشیا کی شدید قلت نے بحرانی کیفیت اختیار کی ہے۔ محکمہ ٹریفک کا کہنا ہے کہ اگر چہ شاہراہ سے برف ہٹائی گئی ہے لیکن شاہراہ پر کئی مقامات پر بھاری پسیاں گر آئی ہیں جنہیں صاف کرنے سے پہلے ٹریفک چلانے کی اجازت نہیں د ی جاسکتی ہے۔ کم و بیش3000 گاڑیاں  شاہراہ پر گذشہ چھ روز سے درماندہ پڑی ہیں۔ گاڑیوں کے درماندہ ہونے کی وجہ سے وادی کشمیر میں کھانے پینے کی چیزوں کی کمی نے اب بحرانی صورت اختیار کی ہے۔ وادی کو پیٹرول اور اس سے بننے والی چیزوں کی بھی شدید کمی لاحق ہوگئی ہے۔ اس دوران ناجائز منافع خوروں اور ذخیرہ اندوزوں نے بھی عوام کو دو دو ہاتھوں لوٹنے کا سلسلہ شروع کر رکھا ہے۔