سویہ بگ کے شہری کا کورونا ٹیسٹ مثبت،جموں کشمیر میں تعداد159ہوگئی

سرینگر//وسطی ضلع بڈگام کے ایک شہری کی کورونا ٹیسٹ رپورٹ جمعرات کو مثبت آنے کے بعد جموں کشمیر میں اس وائرس میں مبتلاءافراد کی تعداد بڑھ کر159ہوگئی ہے۔ چیف میڈیکل آفیسر بڈگام، ڈاکٹر نذیر احمد کے مطابق سویہ بگ کے ہانجک علاقے سے تعلق رکھنے والے 50سالہ شہری کا ٹیسٹ رپورٹ مثبت آیا ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ مذکورہ شہری کی کوئی سفری ہسٹری نہیں ہے، البتہ وہ کورونا سے متاثر ایک شخص کے رابطے میں آیا تھا۔یہ مذکورہ گاﺅں میں کورونا وائرس سے متاثر تیسرا کیس ہے۔  

فورجی انٹر نیٹ سروس بحالی کی درخواست :جموں کشمیر حکومت کے نام سپریم کورٹ کی نوٹس

سرینگر//سپریم کورٹ نے جمعرات کو جموں کشمیر میں 4جی انٹر نیٹ سروس کی بحالی سے متعلق ایک درخواست کی شنوائی کرتے ہوئے حکومت جموں کشمیر کے نام نوٹس جاری کیا۔ اطلاعات کے مطابق یہ نوٹس جموں کشمیر سرکار کو ای میل کے ذریعے بھیجی گئی ہے اوراس کا جواب ایک ہفتے کے اندر داخل کرنے کی ہدایت دی گئی ہے۔ یہ نوٹس سپریم کورٹ کے ڈویژن بینچ، جس میں جسٹس این وی رمنا ، جسٹس آر سبھاش ریڈی اور جسٹس بی آر گاویا شامل ہیں، نے جاری کی ہے۔ درخواست کی شنوائی کے دوران ایڈوکیٹ شادان فراست اور ایڈو کیٹ حفیظہ احمدی ویڈیوکانفرنسنگ کے ذریعے شامل رہے۔ عدالت عظمیٰ پر زور دیا گیا کہ جاری لاک ڈاﺅن کے دوران4جی انٹر نیٹ کی عدم موجودگی کے باعث طالب علموں کی کلاسز بری طرح متاثر ہورہی ہیں۔ تیز رفتار انٹر نیٹ سروس کی معطلی کیخلاف یہ درخواست فراست نے میڈیا پروفیشنلوں کی طرف سے دائر کی ہے جس میں حکومت کے اُس حکم ک

ایک دن میں ریکارڈ اضافہ، 33مثبت،تعداد158

 نئے179نمونے زیر تشخیص، وادی میں 128 اور جموں میں 30متاثرین جموں+سرینگر //صوبہ جموں میں دیر رات کورونا وائرس سے ہلاکت کا پہلا معاملہ سامنے آیا۔اس طرح جموںوکشمیر میں کورونا سے ہلاک ہونے والوںکی تعداد 4ہوگئی ۔ مارچ کے پہلے ہفتے میں کورونا وائرس کا پہلا متاثر شخص سامنے آنے کے بعد بدھ 8اپریل کو ایک دن میں مثبت کیس آنے کا نیا ریکارڈ بن گیا ہے۔کل ایک ہی دن میں 34کیس سامنے آئے جن میں وادی کشمیر سے 30اور جموں سے4کیس شامل ہیں۔نئے 34مشتبہ مریضوں کی رپورٹیں مثبت آنے کے ساتھ ہی جموں و کشمیر میں کورونا وائرس سے متاثرہ مریضوں کی کل تعداد 159ہوگئی ہے جن میں جموں صوبے کے31جبکہ کشمیر کے128مریض ہیں۔حکومتی ترجمان روہت کنسل نے رات پونے بارہ بجے ایک ٹویٹ کرکے یہ افسوسناک اطلاع دی ۔انہوںنے ٹویٹ میں لکھا’’61سالہ خاتون مریض گورنمنٹ میڈیکل کالج جموں ہسپتال میں انتقال کر گئیں ۔وہ کورون

ملک میں موجودہ صورتحال’ سماجی ایمرجنسی‘

نئی دہلی// وزیر اعظم نریندر مودی نے کورونا وبا کی وجہ سے پیدا صورتحال کو’سماجی ایمرجنسی‘قرار دیتے ہوئے بدھ کو کہا کہ کئی ریاستی حکومتوں، ضلع انتظامیہ اور ماہرین نے لاک ڈاؤن کی مدت بڑھانے کو کہا ہے تاہم حتمی فیصلہ لینے سے قبل وزرائے اعلیٰ سے بھی مشاورت ہوگی۔مودی نے ملک میں کورونا وبا کی وجہ سے پیدا صورتحال پر سیاسی جماعتوں کے قانون ساز جماعتوں کے رہنماؤں کے ساتھ بدھ کو یہاں ویڈیو کانفرنس کے ذریعے ایک میٹنگ میں حصہ لیتے ہوئے کہا ’’ملک میں سماجی ایمرجنسی جیسی صورت حال ہے اور اس کے پیش نظر حکومت کو کئی سخت فیصلے کرنے پڑے ہیں۔ ہمیں اب بھی مکمل طور محتاط رہنے کی ضرورت ہے‘‘ ۔ انہوں نے کہا کہ مختلف ریاستی حکومتوں، ضلع انتظامیہ اور ماہرین نے لاک ڈاؤن کی مدت بڑھانے کو کہا ہے۔قابل ذکر ہے کہ کورونا وبا کی وجہ سے ملک میں 21دن کا لاک ڈاؤن کیا گیا ہے جس کی مدت 14اپ

سوپور میں معرکہ آرائی،جنگجو جاں بحق، فوجی زخمی

 سوپور // شمالی قصبہ کے سوپور قصبہ میں جنگجوئوں اور فورسز کے درمیان خونریز جھڑپ میں ایک جنگجو جاں بحق جبکہ ایک فوجی زخمی ہوا۔ اس دوران ایک رہائشی مکان جل کر خاکستر ہوا۔پولیس نے اس بات کا دعویٰ کیا ہے کہ جاں بحق جنگجو جیش کا کمانڈر تھا۔ مسلح تصادم آرائی پولیس نے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ منگل کی شام دیر گئے انہیں آرم پورہ علاقے کی گلاب آباد بستی میں جنگجوئوں کی موجودگی کی اطلاع ملی جس کے بعد  بستی کو گھیرے میں لیا گیا۔انہوں نے کہا کہ رات دیر گئے جب تلاشی کارروائی کی کوشش کی گئی تو فورسز پر جنگجوئوں نے کچھ فائر کئے جس کے بعد محاصرہ سخت کر کے روشنیوں کا انتظام کیا گیا اور آپریشن بدھ کی صبح تک ملتوی کردیا گیا۔پولیس کا کہنا ہے کہ انہیں 2سے4جنگجوئوں کی موجودگی کا شبہ تھا لہٰذا آپریشن کیلئے 22آر آر کے علاوہ سی آر پی ایف 179اور177بٹالین کی مدد بھی حاصل کی گئی۔14گھنٹے تک

وادی میں 62علاقے ریڈ زون قرار

 سرینگر// صوبائی انتظامیہ نے وادی میں 62مقامات کو ریڈ زون قرار دیکر  اسکے ملحقہ درجنوں علاقوں کو بفرزون کے دائرے میں لایا ہے۔سرینگر میں کل14علاقوں کو ریڈزون زمرے میں رکھا گیا ہے جبکہ کشمیر میں ریڈزون قرار دئے گئے علاقوں کی تعداد 62ہوگئی ہے۔ ریڈ زون قرار دیئے گئے  علاقوں میںضلع گاندربل میں 2، پلوامہ 7،  سرینگر 14، بڈگام 6، شوپیان 6 اور بارہمولہ میں 13علاقوں کو ریڈ زون کے زمرے میں لایا گیا ہے۔ جبکہ جموں میں 12علاقوں کو ریڈ زون قرار دیا گیا ہے جن میں جموںمیں 4، ادھم پور 3 اور راجوری 5 علاقوں کو ریڈ زونزمرے میں لایا گیا ہے۔بدھ کو ریڈزون قرار دئے گئے ضلع سرینگر کے تمام علاقوں کو سیل کردیا گیا ہے۔ ڈی سی سرینگر ڈاکٹر شاہد اقبال چودھری نے کہا کہ چھتہ بل میں جراثیم کش ادویات کا چھڑکائو کیا گیا اور علاقے کے سارے راستے بند کر دئے گئے ۔منگل کو عیدگاہ اور لال بازار کے  علاق

لاک ڈائون کا 18واں دن

سرینگر// ملک گیر لاک ڈائون کے 18ویں روز وادی کشمیرمیں ہر سو مکمل خاموشی کا عالم ہے اور کہیں بھی زندگی کی معمولات نظر نہیں آتی ہیں۔نہ صرف شہر سرینگر کے میونسپل حدود میں ہر طرح کی رفتار رک گئی ہے بلکہ میونسپل حدود سے باہر دیگر اضلاع اور قصبوں میںبھی لاکھوں کی آبادی گھروں میں محصور ہے۔ سرینگر کے پا ئین اور سیول لائنز علاقوں میں پچھلے تین روز سے نجی گاڑیوں  اور سکوٹر و موٹر سائیکل سواروں کی آمد و رفت کافی حد تک بڑھ گئی ہے۔پہلے کے ایام میں مکمل لاک ڈائون کی کیفیت صاف طور پر جھلکتی تھی لیکن اب عام ہڑتال جیسی صورتحال دکھائی دے رہی ہے گوکہ پرائیویٹ گاڑیوں کی تعداد اس قدر زیادہ بھی نہیں ہے۔سہ پہر کے بعد نجی گاڑیوں کی آمد و رفت بڑھتی جارہی ہے حالانکہ سڑکوں پر صرف یکطرفہ ٹریفک کے چلنے کی اجازت ہے جبکہ دیگر سڑکوں پر خاردار تاریں بچھائی گئیں ہیں۔صرف لال چوک کو امیراکدل اور ریل چوک سے بند ک

ریڈ زونز میں گھر گھر جاکر ٹیسٹ کئے جائیں

جموں//لیفٹینٹ گورنر کے مشیر بصیر احمد خان نے کہا  ہے کہ کووڈ 19   بیماری کی چین توڑنے میں سماج کے ہر شخص کو اپنا رول ادا کرنا ہو گا ۔ یہ بات انہوں نے ضروری اشیاء اور ادویات کی سٹاک اور سپلائی پوزیشن کا جائیزہ لینے کے دوران ایک میٹنگ میں کہی۔ مشیر موصوف نے ہدایت دی کہ ہسپتالوں کے آس پاس مناسب عمارتوں کو کورنٹین اور آیئسو لیشن مراکز کیلئے استعمال میں لایا جانا چاہئے ۔ انہوں نے کہا کہ ان عمارتوں کو مختلف ہسپتالوں میں کام کر رہے طبی اور نیم طبی عملے کیلئے بھی استعمال میں لایا جا سکتا ہے ۔ میٹنگ میں فیصلہ لیا گیا کہ انڈور سٹیڈیم بارہمولہ میں کورنٹین مرکز قائم کیا جائے گا ۔ مشیر موصوف نے ریڈ زونز میں گھر گھر جا کر لوگوں کا ٹیسٹ کرنے کی ہدایت دی ۔ انہوں نے بیرون ریاست سے آئے افراد سے تلقین کی کہ وہ اپنی سفری تفصیلات متعلقہ حکام کے سامنے ظاہر کریں ۔ مشیر کو بتایا گیا کہ کوڈ 1

سفری پس منظرافراد کی جنگی بنیادوں پر نشاندہی کی ہدایت

سرینگر//ڈویژنل کمشنر کشمیر پی کے پولے نے تمام ضلع ترقیاتی کمشنروں کو ہدایت دی ہے کہ وہ اپنے اپنے اضلاع میں جنگی بنیادوں پر ایسے اَفراد کی نشاندہی کریں جن کا سفری پس منظر ہے اور وہ سامنے نہیں آرہے ہیں تاکہ انہیں انتظامی کورنٹین میں رکھا جاسکے۔تمام ضلع ترقیاتی کمشنروں کو ہدایت دی گئی ہے کہ وہ زمینی سطح پر نگرانی ٹیموں کو مستحکم کریں اور حال ہی میں باہر سے آنے والے ایسے لوگوں کی نشاندہی کریں جو از خود سامنے نہیں آرہے ہیںاور ان کی مناسب سکریننگ اور کورنٹین کو یقینی بنائیں۔ایڈیشنل ڈپٹی کمشنروں کو کنٹریکٹ ٹریسنگ کا انچارج بنایا گیا ہے اور وہ مجوزہ ایڈوائزری کے مطابق طریقے کار پر عمل کر رہے ہیں۔صوبائی کمشنر نے ضلع ترقیاتی کمشنروں کو ہدایت دی ہے کہ وہ کینسر ، ڈائیلیسس اور دیگر مریضوں کے لئے ضلع ہیڈ کوارٹروں پر الگ سے ہیلپ لائین نمبرات قائم کریں تاکہ اس طرح کے مریضوں کے لئے علاج کو یقینی بنا

پرائیوٹ لیبارٹریوں میں بھی کورونا کی مفت جانچ ہوگی :سپریم کورٹ

نئی دہلی// سپریم کورٹ نے بدھ کو ایک اہم حکم جاری کرتے ہوئے کہا کہ تسلیم شدہ پرائیوٹ لیبارٹریوں میں بھی کورونا وائرس ‘کووڈ -19’ کی جانچ مفت کی جائے گی ۔ کورٹ نے بدھ کی صبح کیس کی سماعت کرتے ہوئے کہا تھا کہ پرائیوٹ لیبارٹریوں میں کورونا وائرس انفیکشن کی جانچ کیلئے زیادہ فیس نہیں وصول کی جا سکتی اور وہ اس معاملے میں اپنا حکم سنائے گا ۔ اس کے بعد عدالت نے شام کو عبوری حکم جاری کیا، جس میں اس نے واضح کیا ہے کہ جس طرح سرکاری اسپتالوں میں کورونا وائرس انفیکشن کی جانچ مفت ہو رہی ہے ،ویسے ہی حکومت کی طرف سے تسلیم شدہ لیبارٹریوں میں بھی یہ جانچ مفت کی جائے گی ۔ جسٹس اشوک بھوشن اور جسٹس ایس رویندر بھٹ کی بینچ نے اپنے عبوری حکم میں کہا ہے کہ مرکزی حکومت اس معاملے میں فوری طور پر ضروری ہدایات جاری کرے گی ۔ عدالت نے عرضی گزار ششانک دیو سدھي کی دلائل کو ابتدائی نظر میں صحیح مانتے ہوئے کہا

امراض اطفال کے معروف معالج

سرینگر //وادی میں امراض اطفال کے معروف معالج ڈاکٹر امرجیت سنگھ سیٹھی 8 اپریل کو انتقال کر گئے ہیں۔وہ بچوں کے امراض کے ماہر معالج مانے جاتے تھے۔وادی کے دوردراز علاقوں سے لوگ انکے پاس بچوں کو لاتے رہے ہیں اور یہ سلسلہ کئی دہائیوں سے چلا آرہا تھا۔ شاید ہی وادی میں ایسا کوئی گھر ہوگا جس میں ڈاکٹر سیٹھی کا ذکر نہ کیا جاتا ہو۔انہیں یہ اعزاز حاصل تھا کہ وہ وادی میں بچوں کے دیرینہ معالج تھے اور انہیں یہ امتیاز بھی تھا کہ وہ بچوں کے امراض کا سب سے ماہر ڈاکٹر مانے جاتے تھے۔ ڈاکٹر سیٹھی سرینگر میں بچوں کے اسپتال کے سربراہ بھی رہے تھے۔ان کے والد ڈاکٹر موہن سنگھ بھی وادی کاگھر گھر نام تھا، جن کے پاس وادی کے ہر علاقے سے لوگ آتے تھے۔    

سوپور مسلح تصادم آرائی میں ایک جنگجو جاں بحق: پولیس

سرینگر//پولیس نے بدھ کے روز کہا کہ شمالی ضلع بارہمولہ کے سوپور علاقے میں جنگجوﺅں اور سیکورٹی فورسز کے مابین جو مسلح تصادم آرائی آج صبح شروع ہوئی تھی اُس میں ایک جنگجو جاں بحق ہوگیا ہے۔ پولیس نے کہا کہ تصادم آرائی کی جگہ سے ایک جنگجو کی لاش بر آمد ہوئی ہے جس کی شناخت جیش محمد نامی تنظیم سے وابستہ سجاد احمد ڈار ساکن سوپور کے طور ہوئی ہے۔ اس سے قبل آج صبح سوپور کے آرمپورہ نامی علاقے میں جھڑپ کا آغاز ہوگیا جس کے دوران طرفین کے مابین شدید گولی باری کا تبادلہ ہوا۔  

مادہ روسی سفیدوں کی کٹائی کئی اضلاع میں کارروائی کا آغاز

سرینگر // کورونا وائرس کے بڑھتے خدشات کے پیش نظر مادہ روسی سفیدوں کی کٹائی کیلئے عدالتوں نے اپنے تیور سخت کر دئے ہیں متعلقہ محکمہ جات کے علاوہ لوگوں سے کہا گیا ہے کہ وہ اپنے پانچ سو میٹر کے دائرے میں آنے والے درختوں کو کاٹ دیں اور احکامات کی خلاف ورزی کرنے والوں کے خلاف ضابطہ کے تحت کارروائی عمل میں لائی جائے گی ۔سوگام کپوارہ کے ایگزیکٹیومجسٹریٹ نے ایک نوٹس جاری کیا ہے جس میں انہوں نے تمام محکمہ جات سمیت لوگوں کو اپنے اپنے حدود میں مادہ روسی سفیدوں کی کٹائی کا حکم صادر کیا ہے۔ ایگزیکٹیو مجسٹریٹ درجہ اول دمحال ہانجی پورہ نے بھی ایک آڈر جاری کیا ہے جس میں انہوں نے کہا کہ کسی بھی شہری کے رقبہ اراضی ، یا کاہچرائی ، یا ملکیتی، بنڈ کے کنارے پر درختان سفیدے روسی مادہ کو از خود ایک ہفتہ کے اندر اندر کاٹ دینے کے احکامات صادر کئے ہیں۔بڈگام میں مجسٹریٹ کے احکامات کے بعد ایسے درختوں کی کٹائی شرو

ہینڈلوم ڈیولپمنٹ کارپوریشن | ریلیف فنڈ میں 10لاکھ کا عطیہ

جموں// جموں اینڈ کشمیر سٹیٹ ہینڈ لو م ڈیولپمنٹ کارپوریشن ( جے کے ایچ ڈی سی ) نے کورونا وائرس کے پھیلائو کو روکنے کے سلسلے میں جاری کوششوں کو استحکام بخشنے کے لئے جے اینڈ کے ریلیف فنڈ میں 10لاکھ روپے کا عطیہ کیا۔اِس سلسلے میں منیجنگ ڈائریکٹر جے کے ایچ ڈی سی راکیش شرما نے کمشنر سیکریٹری صنعت و حرفت منوج کمار دوِیدی کو جے اینڈ کے ریلیف فنڈ میں جمع کرنے کے لئے 10لاکھ روپے کی چیک پیش کی۔منیجنگ ڈائریکٹر جے کے ایچ ڈی سی نے کمشنر سیکریٹری کو بتایا کہ یہ رقم کارپوریشن کے ملازمین نے اپنی تنخواہ میں سے نکال کر جمع کردی۔اُنہوں نے مزید کہا کہ جے کے ایچ ڈی سی نے مختلف سرکاری محکموں کو فراہم کرنے کے لئے ماسکس بھی تیار کیں ۔ اِس کے علاوہ جے کے ایچ ڈی سی کووِڈ ہسپتالوں کو بیڈ شیٹ ،تکیہ کور اور میٹرس بھی فراہم کررہا ہے۔  

وادی میں موسلا دھار بارشیں | پہاڑوں پر تازہ برف باری، سرینگر اوربڈگام میں اولے پڑے

 سرینگر // ٹنل کے آر پار سبھی اضلاع میں منگل کے روز ایک بار پھر سہ پہر کے بعد گرج چمک کے ساتھ بارشیں شروع ہوئیں اور کئی علاقوں میں شالہ باری کے علاوہ پہاڑی علاقوں میں ہلکی برفباری بھی ہوئی۔منگل کو وادی کے ساتھ ساتھ خطہ چناب اور پیر پنچال میں موسم ابرالودرہااور بعد دوپہر بالائی علاقوں میں برف باری اور میدانی علاقوں میں بارشیں شروع ہوئیں جو وقفے وقفے سے رات دیر گئے جارہی ر ہیں۔شہر سرینگر میں تیز ہوائوں کے ساتھ گرج چمک کے ساتھ بارشیں ہوئیں۔بڈگام ضلع بھر میں تیز اورشدید ہوائوں کے ساتھ ساتھ ژالہ باری بھی ہوئی جو کئی منٹوں تک جاری رہی ۔ژالہ باری کے نتیجے میں ضلع میں بادام اور دوسرے میوہ جات کے شگوفوں کو کافی نقصان پہنچا ،جبکہ وانگواس گوگجہ پتھری میں تیز بارشوں کے بعد زمین کھسکنے کے واقعات رونما ہونے کی وجہ سے آبادی میں خوف ودہشت پھیل گئی ۔زمین دھنس جانے کے سبب وانگواس میں ایک مکان ،جس

مزید علاقے ناکہ بندی کے دائرے میں لال بازار ، عیدگاہ ،جواہر نگر ، راجباغ اور حاجن بھی شامل

سرینگر+بانڈی پورہ//سرینگرضلع انتظامیہ نے منگل کو عید گاہ،لال بازار، جواہر نگر اور راجباغ کو بھی ’پابندی علاقے‘ قرار دیا ہے۔لال بازار اور عید گاہ میں نئے کورونا کیسز سامنے آنے کے بعد ضلع انتظامیہ نے چھتہ بل کی بھی مکمل طور پر ناکہ بندی کردی جسے پہلے ہی ریڈ زون قرار دیا گیا ہے۔سرینگر ضلع انتظامیہ نے پیر کو پہلے سے ریڈ زون قرار دئیے گئے چھتہ بل کی مکمل طور پر ناکہ بندی کی اور پورے علاقے کوسیل کیا۔ ضلع مجسٹریٹ ڈاکٹر شاہد اقبال چودھری نے کہا کہ چھتہ بل میں جراثیم کش ادویات کا چھڑکائو کیا گیا اور علاقت کے سارے راستے بند کئے گئے۔منگل کو عیدگاہ اور لال بازار کے مزید کیس سامنے آئے جس کے فوراً بعد ضلع انتظامیہ نے یہاں بھی ناکہ بندی کردی اور ہاٹ سپاٹ علاقوں کی طرف جانے والے راستے سیل کردیئے۔ضلع مجسٹریٹ کے احکامات پر منگل کی صبح ہی راجباغ اور جواہر نگر کی بھی ناکہ بندی کی گئی۔مکینوں

محبوبہ مفتی گھر منتقل | رہائش گاہ سب جیل قرار

سرینگر// پبلک سیفٹی ایکٹ کے تحت نظر بند پی ڈی پی صدر محبوبہ مفتی کو منگل کے روز سرکاری رہائش گاہ واقع فیئر ویو گپکارمنتقل کیا گیا۔ محبوبہ مفتی گذشتہ 7ماہ سے زائد کے عرصے سے نظربند ہیں۔ انہیں جنوری میں چشمہ شاہی گیسٹ ہاوس سے ٹرانسپورٹ یارڈمولانا آزاد روڑ  کے ایک سرکاری گیسٹ ہائوس میں منتقل کیا گیا تھا، جو سب جیل بنایا گیا تھا۔محبوبہ مفتی کو ڈاکٹر فاروق اور عمر عبداللہ کیساتھ ہی 5اگست 2019کو پہلے 6ماہ کیلئے نظر بند کیا گیا اور بعد میں تینوں پر پی ایس اے کا اطلاق عمل میں لایا گیا۔ڈاکٹرفاروق اور عمر عبداللہ پر عائد سیفٹی ایکٹ جموں کشمیر انتظامیہ نے واپس لیکر دونوں کی نظر بندی ختم کردی ہے تاہم محبوبہ مفتی ابھی بھی زیر حراست ہیں۔و ہ اپنی رہائش میں ہی نظر بند رہیں گی جسے سب جیل کا درجہ دیا گیا ہے۔ محکمہ داخلہ کے پرنسپل سیکریٹری شالین کابرا کی طرف سے جاری کئے گئے ایک حکم نامہ میں کہا گیا

عمر عبداللہ کا رہائی کا مطالبہ | التجا مفتی کا اظہار افسوس

سرینگر// نیشنل کانفرنس نائب صدر و سابق وزیر اعلیٰ عمر عبداللہ نے محبوبہ مفتی کی گھر منتقلی کے بجائے مکمل رہائی کا مطالبہ کیا ہے۔ انہوں نے اپنے ایک ٹوئٹ میں کہا: 'محبوبہ مفتی کو رہا کیا جانا چاہئے، انہیں گھر منتقل کرکے مسلسل نظر بند رکھنا ہار تسلیم کرنے کے مترادف ہے'۔التجا مفتی، جنہوں نے اپنی والدہ کا ٹوئٹر ہینڈل متحرک رکھا ہے، نے اپنے ایک ٹویٹ میں کہا: 'سال گذشتہ کے پانچ اگست سے غیر قانونی طور پر بند تمام کشمیری رہائی کے مستحق ہیں، موجودہ عالمی وبا کے دور میں بھی ان کی مسلسل نظر بندی ہمارے جمہوری اقدار کی بیخ کنی کے مترادف ہے، تاہم میں ان تمام لوگوں کی ممنون ہوں جو ہمارے خیر خواہ اور حامی ہیں'۔  

جموں کے 6متاثرین کا تعلق سنجواں اور ادھمپور سے

جموں// جموں میںمنگل کو جو 6 نئے کیس سامنے آئے ہیں اُن میں 5غیر ریاستی شہری بھی شامل ہیں۔ ان 6افراد میں سے 5 سنجواں جموں میں قیام پذیر تھے جن میں سے3اتر پردیش کے جبکہ 2 مہاراشٹرا سے تعلق رکھتے ہیں۔ اس کے علاوہ ایک کا تعلق اُدھمپور ضلع سے ہے۔ حکام کا کہنا ہے کہ یہ 6افرادپہلے سے مثبت قرار دئے گئے افراد کے رابطے میں آئے تھے جس کے بعد ان کے نمونے حاصل کئے جو منگل کو مثبت قرار پائے۔  

منگل کو 146افراد کی قرنطینہ مدت مکمل، گھرروانہ

سرینگر // منگل کوکشمیر کے مختلف اضلاع میں انتظامی قرنطینہ کی 14دنوں کی مدت مکمل کرنے والے146افراد کو گھر بھیج دیا گیا ۔ انتظامی قرنطینہ مکمل کرنے والے افراد میں سرینگر کے 34، اونتی پورہ کے 80 اور شاہکوٹ اوڑی کے 32افراد شامل ہیں۔ منگل کو سرینگر کے مختلف علاقوں سے تعلق رکھنے والے 34افرادقرنطینہ مدت مکمل کرنے کے بعد گھر روانہ ہوئے ۔ ایک نوجوان نے بتایا کہ ہوٹلوں میں قرنطینہ کیلئے بہترین انتظامات کئے گئے تھے اور انتظامی قرنطینہ مکمل کرنے سے نہ صرف گھروالوں کو خوشی ہوئی ہے بلکہ وہ بھی کافی خوش ہوئے ہیں۔ قرنطینہ مدت مکمل کرنے والے نوجوانوں نے ضلع انتظامیہ سرینگر کا بھی شکریہ ادا کیا ۔ ادھر اسلامک یونیورسٹی اونتی میں قائم قرنطین مرکز سے80افراد کو14دن کا وقت پورا کرنے کے بعد گھر روانہ کیا گیا۔ان سبھی افراد کو گھروں تک ٹرانسپورٹ مہیا کیا گیا۔ شاہکوٹ اوڑی میں قائم قرنطینہ مرکز میں بھی منگل کو 32