تازہ ترین

پاک زیر انتظام کشمیر میں3 ہفتوں کیلئے مکمل لاک ڈاؤن کا اعلان

گلگت بلتستان اورپاکستان کے چاروں صوبوں میں فوج طلب

25 مارچ 2020 (00 : 01 AM)   
(      )

 سرینگر //پاکستانی زیر انتظام کشمیر کے وزیراعظم راجا فاروق حیدر نے ریاست میں 3 ہفتوں کے لیے مکمل لاک ڈاؤن کا اعلان کردیا۔معلوم ہوا ہے کہ پاکستانی وزارت داخلہ نے پاکستانی زیر انتظام کشمیر ، گلگت بلتستان اورملک کے چاروں صوبوں میں فوج کو طلب کیا ہے۔ اپنے ایک ویڈیو پیغام میں انہوں نے کہا کہ آج رات 12 بجے سے پاکستانی زیر انتظام کشمیر میں مکمل لاک ڈاؤن کردیا جائے گا تاہم لاک ڈاؤن سے مراد کوئی کرفیو نہیں ہے۔انہوں نے کہا کہ یہ شہریوں کے مفاد میں کیا جارہا ہے، ساتھ ہی انہوں نے بتایا کہ 3 ہفتوں کے لیے ہر طرح کے اجتماعات پر پابندی لگائی گئی ہے۔راجا فاروق حیدر کا کہنا تھا کہ عوام کے بین ضلعی اور پاکستانی زیر انتظام کشمیر بھر میں سفر پر پابندی ہوگی۔اس کے علاوہ ان کا کہنا تھا کہ عوام کے غیر ضروری سفر کرنے اور باہر نکلنے پر پابندی ہو گی جبکہ ہر قسم کا ٹرانسپورٹ مکمل معطل رہے گا۔ وزیراعظم پاکستانی زیر انتظام کشمیر کا کہنا تھا کہ ناگزیر حالات میں سفر کرنے کے لیے خصوصی پاس جاری کیے جائیں گے، کھانے پینے کا سامان لانے کے لیے گھر کے ایک فرد کو جانے کی اجازت ہوگی۔ان کا کہنا تھا کہ عوام گھروں سے باہر نہ نکلیں اور اگر انتہائی ناگزیر حالات ہوں تو شناختی کارڈ ساتھ رکھیں۔انہوں نے کہا کہ صرف محکمہ صحت، پولیس انتظامیہ اور اشیائے خورو نوش کا کاروبار کرنے والوں کو ہی باہر آنے کی اجازت ہوگی، اس کے علاوہ صحافیوں کو خصوصی پاس جاری کیے جائیں گے۔ انہوں نے واضح کیا کہ ایمرجنسی سروسز جاری رہیں گی۔واضح رہے کہ پورے پاکستان میں بڑھتے کورونا وائرس سے اب تک 6 افراد موت کا شکار ہوچکے ہیں جبکہ وائرس سے 825 لوگ متاثر ہیں۔ پاکستان میں سب سے زیادہ صوبہ سندھ متاثر ہے جہاں ایسے افراد کی تعداد 352 ہے جبکہ پنجاب میں 246 افراد اس وائرس کا شکار ہوئے ہیں،تاہم پاکستانی زیر انتظام کشمیر میں ابھی تک وائرس کا ایک ہی کیس سامنے آیا ہے ۔