تازہ ترین

مشکوک فضائی نقل و حرکت کے بعد دیگوار میں شدید گولہ باری

پونچھ قصبہ کے قریب بھی گولے گرے ،لوگوں میں خوف وہراس

20 مارچ 2020 (00 : 01 AM)   
(   File    )

حسین محتشم+سمت بھارگو
پونچھ//پونچھ حد متارکہ کے قریب مشکوک فضائی نقل و حرکت کے دو گھنٹوں بعد ہی پاکستانی افواج نے دیگوار علا قہ میں شدید گولہ باری کی جس کے دوران 82اور 120ایم ایم ماٹر کا استعمال کیا گیا ۔فائرنگ اس قدر شدید تھی کہ لوگوں نے اپنے آپ کو گھروں میں ہی محصور کر لیا جبکہ اس دوران 2گولے پونچھ قصبہ کے قریب آکر گرے ۔دفاعی ذرائع کے مطابق گزشتہ روز صبح6:53 بجے پونچھ کے دیگوار علا قہ میں حد متارکہ کے قریب فضا میں کچھ مشکوک نقل و حرکت نوٹ کی گئی جبکہ اس نقل و حرکت کے دوران دھواں بھی دیکھا گیا ۔انہوں نے خدشہ ظاہر کرتے ہوئے کہاکہ پاکستانی افواج کی جانب سے علا قہ میں ’لو آربٹ سیٹیلائٹ ‘(Low Orbit  Satellite)استعمال کیا گیا ہے تاہم اس کے دو گھنٹوں کے اندر ہی پاکستانی افواج کی جانب سے ہندوستانی فوجی چوکیوں و رہائشی علا قوں میں شدید گولہ باری شروع کر دی گئی ۔انہوں نے بتایا کہ فائرنگ کے پہلے 50منٹوں تک پاکستانی افواج کی جانب سے ایم ایم جی اور ایل ایم جی و 82ایم ایم ماٹر کو استعمال کیا گیا جس کے بعد 120ایم ایم ماٹرو ایس ایم جی کو استعمال کیا گیا ۔فائرنگ اس قدر شدید تھی کہ لوگوں میں خوف و ہراس پیدا ہو گیا جبکہ 2گولے پونچھ قصبہ سے آدھا کلو میٹر کی دوری پڑے تاہم ان سے کوئی جانی ومالی نقصان نہیں ہوا ۔ واضح رہے کہ پچھلے آٹھ روز سے حدِ متارکہ پر وقفہ وقفہ سے گولہ باری کا سلسلہ جاری ہے۔ایک طرف جہاں لوگ کوروناوائرس سے خوف زدہ ہیںتو دوسری جانب لگاتار ہورفائر نگ نے لوگوں کیلئے مزید مشکلات پیدا کر دی ہیں ۔ایک مقامی شخص نے بتایا کہ گولہ باری کے دوران وہ اپنے گھروں میں محصور ہو جاتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ فائرنگ اور کورو نا وائرس کی وجہ سے مکینوں کی مشکلات میں مزید اضافہ ہو چکا ہے ۔مکینوں نے وزیر اعظم نریندر مودی سے اپیل کرتے ہوئے کہاکہ وہ پاکستان کے وزیر اعظم سے بات چیت کے ذریعہ مسائل حل کرنے کی کوشش کریں تاکہ وہ لوگ روز روز کی پریشانیوں سے نجات حاصل کر سکیں۔