تازہ ترین

دلی میں بد امنی پھیلانے والے آزاد کیوں؟

فاروق ،عمر اور محبوبہ کی نظر بندی پر کانگریس لیڈر کپل سبل کا سوال

13 مارچ 2020 (00 : 01 AM)   
(      )

مانیٹرنگ ڈیسک
سرینگر //کانگریس کے سینئر لیڈر اور معروف قانون دان کپل سبل نے جمعرات کو کہا کہ جموںوکشمیر کے تین سابق وزرائے اعلیٰ کو بقول انتظامیہ اس وجہ سے نظر بند رکھا گیا ہے کہ کیونکہ اُن کی جانب سے بد امنی کا سبب بننے والے بیانات دئے جاسکتے تھے، تاہم دہلی میں ہنگامہ برپا کرنے والے بیانات دینے والے لیڈران اب بھی آزادانہ طورپر گھوم پھر رہے ہیں۔ راجیہ سبھا میں دہلی فسادات پر بحث میں حصہ لیتے ہوئے راجیہ سبھا ممبر سبل نے کہا کہ منصوبہ بند سازش کے تحت دہلی میں فسادات کروائے گئے۔ انہوںنے کہا کہ مرکزی حکومت ایسے افراد کے خلاف کارروائی کرنے سے قاصر نظر آرہی ہے جنہوںنے فسادات برپا کرنے والے بیانات جاری کئے۔ انہوںنے کہاکہ فسادات میں ملوث ایسے افراد جنہوںنے لوگوں کو تشدد کیلئے اُکسایا ، کے خلاف سخت سے سخت کارورائی عمل میں لانے کی ضرورت ہے ۔ کپل سبل کے مطابق مرکزی حکومت نے ابھی تک اُن لیڈران کے خلاف کوئی کارروائی نہیں کی جنہوںنے سخت نوعیت کے بیانات جاری کئے۔ انہوںنے کہا’’ جموںوکشمیر کے تین سابق وزرائے اعلیٰ عمر عبدا ﷲ، فاروق عبدا ﷲ اور محبوبہ مفتی کو اس وجہ سے پی ایس اے کے تحت نظر بند کیا گیا کیونکہ بقول سرکاراُن کے بیانات بد امنی کا سبب بن سکتے تھے،لیکن دہلی میں کئی لیڈران نے ہنگامہ برپا کرنے والے بیانات دئے، اُنہیں کیوں گرفتار نہیں کیا جارہا ہے؟‘‘۔