تازہ ترین

اننت ناگ اسپتال میں حاملہ خاتون کی مبینہ طبی غفلت سے موت

26 جون 2019 (04 : 02 PM)   
(      )

عظمیِ نیوز ڈیسک

سرینگر/حکام نے بدھ کو جنوبی کشمیر میں اننت ناگ کے زنانہ اسپتال واقع شیر باغ میں ایک حاملہ خاتون کی مبینہ طور طبی غفلت کے نتیجے میں ہوئی موت کی تحقیقات کے احکامات صادر کرلئے۔

خبر رساں ایجنسی جی این ایس کے مطابق 25 سالہ شوبی جان اہلیہ محمد حسین بٹ ساکنہ سرنل اننت ناگ گذشتہ روز مبینہ طورطبی غفلت کے نتیجے میں جاں بحق ہوگئی۔

مرحومہ کے قریبی رشتہ داروں کے مطابق گذشتہ روز صبح سویرے اسپتال میں داخل کرنے کے بعد شوبی کی سرجری دن کے دو بجے طے تھی تاہم وقت پر کوئی بھی ڈاکٹر میسر نہ ہونے اور ایک طویل وقت تک کوئی مناسب طبی امداد نہ ملنے کے سبب اُس کی موت واقع ہوگئی۔

انہوں نے مزید کہا کہ دن میں ہی شوبی کی حالت خراب ہوگئی اور اس سلسلے میں جب ڈاکٹروں کو مطلع کیا گیا تو اُنہوں نے رات کے گیارہ بجے تک اُنہیں منتظر رکھا۔اس کے بعد شوبی کو لیبر روم میں لیجایا گیا جہاں اُسے بقول اُنکے گھنٹوں منتظر رکھا گیا اورکوئی طبی امداد فراہم نہیں کی گئی ۔اسکے بعد انتہائی خراب حالت میں شوبی کو رات کے تین بجے آپریشن تھیٹر لیجایا گیا تو وہ بھی گھنٹوں تک نہیں کھلا ۔ صبح چھ بجے آپریشن تھیٹر کا دروازہ صرف اُسی وقت کھولا گیا جب وہاں لوگ جمع ہوگئے۔

اسپتال کے میڈیکل سپر انٹنڈنٹ ڈاکٹر ایم وائی ذاگو کے مطابق معاملے کی تحقیقات کا حکم دیدیا گیاہے اور تحقیقات کرنے والی ڈاکٹروں کی ٹیم میں ڈاکٹر اقیلا اور ڈاکٹر مسرت شامل ہیں۔ ٹیم کو ہدایت دی گئی ہے کہ وہ جلد سے جلد اپنی رپورٹ پیش کرے۔

دریں اثناء پولیس نے بھی معاملے کا سنجیدہ نوٹس لے لیا ہے۔