تازہ ترین

خنزیزی بخار کا زور جاری، سکمز میں مرنے والوں کی تعداد 20پہنچ گئی

مریضوں کیلئے 2 الگ واڑڈ قائم،4 ماہ میں 1194مریضوں کی تشخص

17 فروری 2019 (00 : 01 AM)   
(      )

اشفاق سعید
سرینگر //صورہ ہسپتال میں سوائن فلو کی وجہ سے مرنے والوںکی تعداد 20تک پہنچ چکی ہے تاہم انتظامیہ کا کہنا ہے کہ اس سال سب سے زیادہ مریضوں کو ہسپتال میں لایا گیا تھا جس میں سے صرف ایسے 20 افراد کی موت ہوئی جو پہلے سے ہی دیگر مہلک بیماروں میں بھی مبتلا تھے ۔ہسپتال میں ابھی بھی ایسے 13ایسے مریض زیر اعلاج ہیں جن کے ٹیسٹ منفی آئے ہیں ۔ ہسپتال حکام نے اعداد وشمار پیش کرتے ہوئے کہا کہ اکتوبر سے آج تک ہسپتال میں کل 1194مریضوں کو تشخص کیلئے لایا گیا تھا جس میں سے 316مریضوں کے ٹیسٹ مثبت آئے اور 878مریضوں کے ٹیسٹ منفی آئے ہیں ۔حکام کے مطابق اس دوران 117مریضوں کو ہسپتال میں علاج ومعالجہ کیلئے بھرتی بھی کرنا پڑا جس کے بعد ایسے مریضوں کو ہر ممکن علاج ومعالجہ کیا گیا ۔ہسپتال انتظامیہ کے مطابق اس سال سرما کے مہینے میں سکمز میں ایسے 20افراد کی موت واقعہ ہوئی ہے جو دیگر مہلک بیماروں کے ساتھ ساتھ سوائن فلو نامی بیماری کی لپیٹ میں بھی آئے تھے ۔انہوں نے کہا کہ گذشتہ سردیوں کے مقابلے میں اس سال سب سے زیادہ ایسے مریضوں کو ہسپتال میں لایا گیا تھا تاہم اموات کی شرح کم رہی ہے ۔ہسپتال انتظامیہ کے مطابق ایسے مریضوں کو ہسپتال میں ہر ممکن طبی سہولیات فراہم کی جا رہی ہے جبکہ اُن کیلئے ہسپتال میں دو الگ واڑڈ قائم کئے گئے ہیں ۔ادھر صدر ہسپتال سرینگر کے حکام کے مطابق اس ہسپتال میں کافی تعداد میں تشخص کیلئے لوگ آئے اور کافی زیادہ لوگوں کے ٹیسٹ منفی آئے ہیں ۔حکام کے مطابق ہسپتال میں سوائن فلو کی وجہ سے کس بھی مریض کی موت واقع نہیں ہوئی ہے ۔