تازہ ترین

مزید خبریں

11 فروری 2019 (00 : 01 AM)   
(      )

نیو ڈسک

پیپلز مومنٹ کاافضل گورو اور مقبول بٹ کو خراج

جموں// جموں کشمیر پیپلز مومنٹ نے محمد افضل گورو اور محمد مقبول بٹ کو ان کی برسی پر شاندار خراجِ عقیدت پیش کرتے ہوئے بھارت سرکار سے ان کے باقیات کی واپسی کا مطالبہ کیا ہے۔ سینئر حریت رہنما اور پیپلز مومنٹ کے چیرمین میر شاہد سلیم نے پریس کے نام جاری بیان میں کہا ہے کہ محمد افضل گورو اور محمد مقبول بٹ کا نام جموں کشمیر کی تحریکِ مزاحمت میں سنہری حروف کے ساتھ لکھا جائے گا۔ انہوں نے کہا بھارت نے کشمیریوں کے خلاف ظلم و زیادتی اور جبرو استبداد کی جو داستانیں رقم کی ہیں اس کی مثال مہذب انسانی تاریخ میں ملنی مشکل ہے۔میر شاہد سلیم نے عالمی برادری اور انسانی حقوق کی علمبردار تنظیموں سے اپیل کی ہے کہ وہ محمد افضل گورو اور شہید مقبول بٹ کے باقیات کو واپس دلانے کے لئے بھارت پر اپنا دباؤ ڈالیں۔ حریت رہنما نے محمد مقبول بٹ اور محمد افضل گورو سمیت کشمیر کے ہزاروں شہداء کو زبردست خراجِ عقیدت پیش کرتے ہوئے کہا کہ جموں کشمیر کے عوام گزشتہ ستر برسوں سے، بالخصوص پچھلے تیس سالوں سے اپنے پیدائشی حق حقِ خود ارادیت کے حصول کی خاطر بے پناہ قربانیاں پیش کر رہے ہیں ۔ اور یہ سلسلہ ان کی حصول منزل تک جاری رہے گا۔ 
 

 روٹیشنل ہیڈکوارٹراورعلیحدہ صوبوں کادرجہ دینے کامطالبہ 

کرگل، چناب اورپیرپنچال کی مانگ حق بجانب :شیعہ فیڈریشن 

جموں//شیعہ فیڈریشن نے کرگل کے عوام کے مطالبات کی حمایت کرتے ہوئے کہاہے کہ حکومت لیہہ پر ہی کیوں مہربان ہے اور سب کا ساتھ سب کا وکاس کانعرہ کہاں چلاگیا۔فیڈریشن نے خطہ پیر پنچال اور خطہ چناب کیلئے بھی صوبائی درجے کے مطالبے کی حمایت کا اعلان کیاہے۔ اخبارات کو جاری ایک بیان میں فیڈریشن کے صدر عاشق حسین خان نے کہاکہ کرگل ضلع کی آبادی لیہہ سے بہت زیادہ ہے لیکن بدقسمتی سے اس ضلع کو ہر سطح پر نظرانداز کیاگیااور اب صوبائی صدردفتر کو بھی لیہہ میں قائم کرکے ایک اور ناانصافی کی گئی ۔ ان کاکہناتھاکہ کرگل کے عوام کئی روز سے کرگل اسکردو تاریخی راستہ کھولنے کی مانگ کررہے ہیں لیکن انہیں کوئی سننے کو بھی تیار نہیں۔ انہوںنے کہاکہ حکومت یا انتظامیہ عوامی مسائل حل کرنے کیلئے ہوتی ہے لیکن یہاں سب کچھ الٹاہورہاہے اور مسائل حل کے بجائے انتشار پھیلانے کے اقدامات کئے جارہے ہیں۔ عاشق خان نے کہاکہ کرگل کے لوگوں کا احتجاج مبنی برحق ہے اور انہیں بھی حق ملناچاہئے ۔انکاکہناتھاکہ مرکزی حکومت سب کا ساتھ سب کا وکاس کے نعرے سے برسر اقتدار آئی لیکن اس نعرے کا کیا یہی مفہو م ہے کہ ایک علاقے کونظرانداز کیاجائے اور دوسرے کو سب کچھ دے دیاجائے ۔ انہوں نے کہاکہ کرگل کے لوگوں کے مطالبات پورے کئے جائیں اور ان کی آواز سنی جائے ۔عاشق خان نے کہاکہ خطہ پیرپنچال اور خطہ چناب کے صوبائی درجے کے مطالبات پر بھی غور کیاجائے اور ان دونوں خطوںکو بھی نظرانداز نہیں کیاجاناچاہئے ۔ فیڈریشن صدر نے کہاکہ بدقسمتی سے ایسے فیصلے کئے جارہے ہیں جن کا ریاست کی وحد ت پر اثر پڑنے کا اندیشہ ہے اوراس سے بھائی چارہ بھی متاثرہوسکتاہے ۔
 
 
 
 

سانبہ میں تنظیم علماء اسلام کااجلاس منعقد

سانبہ// دارالعلوم مجددیہ حنفیہ وجے پور سانبہ میں تنظیم علماء اسلام کاایک اجلاس حافظ حفیظ احمد قادری کی صدارت میں منعقدہواجس میںضلع بھر کے ائمہ حضرات نے شرکت کی۔اس دوران 24 فروری 2019 بروز اتوار کو رام لیلا میدان دہلی میں ورلڈ پیس کانفرنس اور صدسالہ اعلیٰ حضرت انٹرنیشنل کانفرنس کی تیاریوں کا جائزہ لیا گیا ۔اس موقعہ تنظیم کے صدر مولانا حفیظ احمد نے تمام علماء کرام سے اور تمام اہل اسلام سے کانفرنس میں شمولیت کو یقینی بنانے کی اپیل کی ۔انہوں نے کہاکہ کانفرنس میں ملک کے ساتھ ساتھ بیرون ملک سے بھی بڑے بڑے دانشور عالم دین تشریف لا رہے ہیں ۔میٹنگ میں شرکت کرنے والے علماء کرام میں مولانا سرفراز احمد قادری، مولانا سید ساحل رضا ،مولانا محمد شفیع رضوی امام مرکزی جامع مسجد ڈی سی آفس سانبہ جنرل سیکرٹری تنظیم علماء ،اسلام سانبہ مولانا محمد علی ،مولانا رحمت علی ،مولانا فیصل احمد، مولانا خالد حسین راہی ،حافظ لیاقت علی ، ماجد احمد اور عرفان احمد وغیرہ ودیگر ان شامل تھے۔انہوں نے یقین دہانی کروائی کہ کانفرنس کو کامیاب بنانے کے لئے ہم ہر طریقے سے زیادہ سے زیادہ لوگوں تک اس پیغام کو پہنچائیں گے اور کانفرنس کو کامیاب بنائیں گے۔
 
 
 
 

۔30  واں روڈ سیفٹی ہفتہ اختتام پذیر 

کے سکندن کا پبلک ٹرانسپورٹ نیٹ ورک کو مستحکم بنانے پر زور

جموں //گورنر کے مشیر کے سکندن نے ریاست میں ٹریفک نظام کو مزید بہتر بنانے کیلئے پبلک ٹرانسپورٹ نیٹ ورک کو مستحکم بنانے پر زور دیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ٹریفک جامنگ پر قابو پانے کیلئے لوگوں کو چاہئیے کہ وہ پبلک ٹرانسپورٹ کا زیادہ سے زیادہ استعمال کریں ۔ مشیر موصوف نے ان باتوں کا اظہار 30 ویں قومی روڈ سیفٹی ہفتے کی ختتامی تقریب پر کیا ۔ اس تقریب کا اہتمام موٹر وہیکل ڈیپارٹمنٹ نے ٹریفک پولیس جموں کے اشتراک سے کیا تھا ۔ یہ تقریب پولیس آڈیٹوریم میں منعقد کی گئی ۔ روڈ سیفٹی ہفتے کا موضوع ’’ سڑک سرکھشا ۔ جیون رکھشا ‘‘ تھا ۔ تقریب پر پرنسپل سیکرٹری ٹرانسپورٹ ڈاکٹر اصغر حسن سامون ، ٹرانسپورٹ کمشنر ڈاکٹر ایس پی وید ، آئی جی پی ٹریفک آلوک کمار ، ایڈیشنل ٹرانسپورٹ کمشنر اعجاز عبداللہ اور دیگر افسران کے علاوہ طالب علموں کی ایک بڑی تعداد موجود تھی ۔ اپنے خیالات کا اظہار کرتے ہوئے مشیر موصوف نے کہا کہ اُن مقامات کا تفصیلی جائیزہ لیا جانا چاہئیے جہاں حادثوں کے زیادہ امکانات رہتے ہیں تا کہ وہاں پر بہتر طبی سہولیات کی فراہمی کو یقینی بنایا جا سکے ۔ انہوں نے سڑک سرکھشا کے ساتھ ساتھ جیون رکھشا پر توجہ مرکوز کرنے کی تلقین کی۔ مشیر موصوف نے کہا کہ روڈ سیفٹی کے علاوہ انسانوں کی سلامتی زیادہ اہم ہے اور اس سلسلے میں نوجوانوں کے ساتھ نشستوں کا اہتمام کیا جانا چاہئیے تا کہ روڈ سیفٹی کے بارے میں جانکاری کو عام کیا جا سکے ۔ موثر عوامی پالیسی کی اہمیت کو اجاگر کرتے ہوئے مشیر موصوف نے کہا کہ اس سلسلے میں اگرچہ پہلے ہی بہت کچھ کیا جا چکا ہے تا ہم پالیسی کی ترتیب میں ابھی بہت کچھ کیا جانا باقی ہے انہوں نے ٹریفک قوانین کی موثر عمل آوری کو یقینی بنانے کی ہدایت دی ۔ کے سکندن نے کہا کہ محفوظ سفر کیلئے قواعد و ضوابط کی پاسداری انتہائی لازمی ہے ۔ مشیر موصوف نے طالب علموں اور رضا کاروں کو فسٹ ایڈ کی تربیت فراہم کرنے کی اہمیت بھی اجاگر کی ۔ انہوں نے ہفتے بھر کی کامیاب تقریبات کے انعقاد کیلئے ٹرانسپورٹ محکمہ اور ٹریفک پولیس کو مبارکباد دی ۔ انہوں نے ان پروگراموں میں طالب علموں کی شرکت کی بھی سراہنا کی ۔ اپنے خطاب میں پرنسپل سیکرٹری ٹرانسپورٹ ڈاکٹر اصغر حسن سامون نے لوگوں کو روڈ سیفٹی کے بارے میں جانکاری دینے کے ساتھ ساتھ اس موضوع پر طالب علموں کیلئے سلیبس میں ایک مضمون شامل کرنے پر زور دیا ۔ ٹرانسپورٹ کمشنر ایس پی وید نے پروگرام کے شرکاء کو روڈ سیفٹی کیلئے اٹھائے جا رہے اقدامات اور گذشتہ ہفتے کے پروگراموں کے بارے میں تفصیلی جانکاری دی ۔ معزز مہمانوں نے پروگراموں میں شرکت کرنے والے سکولوں ، طالب علموں ، فنکاروں ، بائیکروں ، غیر سرکاری رضا کار تنظیموں ، صحافیوں اور دیگر متعلقین کو اعزازت سے نوازہ ۔ پروگرام کے دوران معروف لوک فنکاروں بشمول رومالو رام نے روڈ سیفٹی کے موضوع پر ایک پروگرام پیش کیا ۔ محکمہ اطلاعات کی جانب سے ڈرگ ایڈیکشن اور روڈ سیفٹی کے موضوع پر ایک مختصر ڈرامہ پیش کیا گیا ۔ ٹرانسپورٹ کمشنر کی نگرانی میں آر ٹی او جموں نے اعزازات عطا کرنے کی تقریب کا انعقاد کیا ۔ یہ بات قابلِ ذکر ہے کہ روڈ سیفٹی ہفتے کا آغاز جموں یونیورسٹی میں کیا گیا تھا
 
 
 
 

خورشید گنائی نے غذائی اجناس سپلائی پوزیشن کاجائزہ لیا 

جموں//گورنر کے مشیر خورشید احمد گنائی نے کشمیر اور جموں صوبوں بالخصوص برف سے ڈھکے علاقوں میں غذائی اجناس ، ایل پی جی ، تیل خاکی ، پیٹرولیم اشیاء اور دیگر ضروریاتِ زندگی کو مناسب مقدار میں دستیاب کرانے کی ضرورت پر زور دیا ۔ مشیر نے ڈویژنل کمشنر کشمیر بصیر احمد خان اور کمشنر سیکرٹری خوراک ، سول سپلائیز اور امور صارفین ڈاکٹر عبدالرشید کو ہدایات دیں کہ وہ ان دونوں صوبوں میں سٹاک اور سپلائی پوزیشن کا جائیزہ لیں ۔ انہوں نے صوبائی کمشنر سے کہا کہ وہ وادی کے تمام ضلع ترقیاتی کمشنروں اور کمشنر سیکرٹری کے ساتھ غذائی اجناس کی دستیابی کا جائیزہ لیں ۔ انہوں نے اسی طرح کی ہدایات جموں کے ڈویژنل کمشنر کو بھی دیں ۔ علاوہ ازیں مشیر موصوف نے دونوں صوبوں کے دور افتادہ اور برف سے ڈھکے علاقوں میں غذائی اجناس کی دستیابی ہر صورت میں یقینی بنانے کی ہدایات دیں ۔