پسماندہ طبقوں کی مانگیں پوری کرنے کامطالبہ

ایس سی /ایس ٹی /اوبی سی کنفیڈریشن کے زیراہتمام ریلی

11 فروری 2019 (00 : 01 AM)   
(      )

نیو ڈسک
جموں//آل انڈیاکنفیڈریشن آف ایس سی /ایس ٹی /اوبی سی کے بینرتلے پسماندہ طبقوں کے لوگوں نے ڈاکٹرامبیڈکرچوک میں احتجاجی مظاہرہ کیا۔اس دوران لوگوں نے پلے کارڈاورجھنڈے اٹھارکھے تھے جن پرمانگوں کی حمایت میں نعرے درج تھے۔اس دوران مظاہرین نے پارلیمنٹ کی ترامیم نمبر 77،81 ،82 اور85 کوجموں وکشمیرمیں لاگوکرنے ،ترقیوں میں ریزرویشن بحال کرنے ،بیک لاک اسامیوں کوپرکرنے، 13 نکاتی روسٹرکے بجائے 200 پوائنٹ کے روسٹرکولاگوکرنے،ایڈہاک،کنٹریکچراوردیگرعارضی ملازمین کی مستقبلی ،اوبی سیزکوریزرویشن دینے اورادرسوشل کاسٹ لفظ کوہٹانے، ایس سی طبقہ سے گورنرکاایک صلاحکارتعینات کرنے کواُجاگرکرتے ہوئے گورنرانتظامیہ سے مانگیں پوراکرنے پرزوردیاگیا۔اس موقعہ پرخیالات کااظہارکرتے ہوئے آرکے کلسوترہ نے کہاکہ سابقہ پی ڈی پی۔بی جے پی مخلوط حکومت نے ایس سی طبقہ سے تعلق رکھنے والے سات ایم ایل سی ہونے کے باوجود ایس سی /ایس ٹی اوراوبی سی طبقوں کومایوس کیا۔انہوں نے کہاکہ ہم نے ریاستی گورنرکے صلاحکارکے ذریعے متعددبارمیمورنڈم پیش کئے ہیں لیکن حکومت کوئی بھی توجہ نہیں دے رہی ہے۔انہوں نے پسماندہ طبقوں کے لوگوں کومتحدہوکرکاذکیلئے جدوجہدکرنے پرزوردیا۔اس موقعہ پر مشتاق بڈگامی نائب صدرکنفیڈریشن نے بھی خیالات کااظہارکیا۔انہوں نے کہاکہ 10 مارچ کو کنفیڈریشن جموں میں مہارریلی جبکہ 24 فروری کوسرینگرمیں مہاریلی کااہتمام کرے گی۔اس موقعہ پر امرناتھ بھگت ،نزاکت کھٹانہ، اے این ڈوگرہ، وکی ڈوگرہ، چوہدری ظفر، روشن چوہدری، ششی سیال، ترون اپروچ ،شفقت صابر،سنیل سیال اورسوشیل کمارنے خیالات کااظہارکیا۔