تازہ ترین

فی میل ملٹی پرپزہیلتھ ورکرس کی ہڑتال جاری

حکومت سے مانگیں پوری کرنے کامطالبہ کیا

23 اکتوبر 2018 (00 : 01 AM)   
(      )

جموں//جموں وکشمیر کی سرمائی دارالحکومت جموں میں اپنے مطالبات کے حق میں برسر احتجاج فی میل ملٹی پر پزورکر س کی کام چھوڑو ہڑتال سوموارکے روز57ویں دن میں داخل ہوگئی۔فی میل ملٹی پرپز ہیلتھ ورکر س نے پیر کے روز یہاں ایک پریس کانفرنس کے دوران حکومت سے فی میل ملٹی پرپزہیلتھ ورکروں کی جائزمانگوں کوپوراکرنے کامطالبہ کیاہے ۔قبل ازیں جموں کشمیر میڈیکل ایمپلائزفیڈریشن کے بینر تلے ناظم صحت جموں کے دفتر کے سامنے 57 ویں روز بھی دھرنا دے کر احتجاج کیا اور اپنے مطالبات کے حق میں زبردست نعرے بازی کی۔احتجاجی ملازمین ورکرس کی سربراہی کر نے والے فیڈریشن کے صدر سشیل سودھن نے بتایا گزشتہ کئی دنوں سے فی میل ملٹی پرپز ہیلتھ ورکرس ہڑتال پر بیٹھے ہیں لیکن حکومت اس جانب کوئی توجہ نہیں دے رہی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ برقت تنخواہوں کی واگذری اور رینک پرموشن جسے مطالبات کے حق میں ہیلتھ ورکر س دھرنے پر بیٹھنے کے لئے مجبور ہیں تاہم ان کے مطالبات کو پوراکرنے کے تعلق سے محکمہ صحت کے اعلیٰ حکام اور حکومت کی جانب سے ابھی تک کو ئی پیش رفت نہیں ہوئی ہے۔انہوں نے بتایا ہیلتھ ورکرس کو ان کا حق دلانے کے لئے فیڈریشن کی ذیلی تنظیموں کے تعاون سے 24 اکتوبر کو گرمائی دارالحکومت سری نگر میں سکریٹریٹ کا گھراؤ کیا جائے گا۔انہوں کہا کہ جب تک ہمارے جائزمطالبات پورئے نہیں کئے جاتے ہڑتال جاری رہے گی۔