تازہ ترین

سرنکوٹ کالج میں جشن ِیوم سرسید کی تقریب

19 اکتوبر 2018 (00 : 01 AM)   
(      )

بختیار حسین
سرنکوٹ//سر سید ایجوکیشن مشن جموں وکشمیر کی جانب سے گورنمنٹ ڈگری کالج سرنکوٹ میں جشن یوم سر سید منایا گیا جہاں مہمان خصوصی ڈپٹی کمشنر راجوری اعجاز اسد تھے۔تقریب میں سب جج سرنکوٹ مظفر اقبال خان ،سابق وزیر ونیشنل کانفرنس سیکریٹری سید مشتاق احمد بخاری ،سر سید ایجوکیشن مشن چیئرمین ڈاکٹر سرفراز احمد میر،ایڈیشنل موبائل مجسٹریٹ سرنکوٹ سرفراز احمد نواز ،ڈپٹی کمشنر پونچھ راہل یادو، گورنمنٹ ڈگری کالج سرنکوٹ کے پرنسپل تیجندر سنگھ ،وائس پرنسپل وجاہت جعفری،ایس ڈی ایم  سرنکوٹ سلیم قریشی ،تحصیلدار سرنکوٹ شاہد اقبال ،بی ڈی او سرنکوٹ قدیر چاڑک ،سابق بی ڈی او غلام مصطفی ،تعلیمی اداروں کے سربراہان و سب ڈیویژن سرنکوٹ کے افسران بھی موجو دتھے ۔اس دوران ایک مشاعرہ بھی ہوا جس میں خطہ پیر پنچال کے معرو ف شعراء نے اپنا اپنا کلام پیش کیا او ر ساتھ ہی مرحوم سرسید کو خراج عقیدت پیش کیا۔مقررین نے کہا کہ سر سید احمد خان کی تعلیمی میدان میں جدوجہد ناقابل فراموش ہے اوروہ موجودہ دور کے معمار تعلیم کے لئے مشعل راہ ہیں۔انہوں نے کہاکہ علی گڑھ تحریک کے بانی کی خدمات کی دنیا میں کوئی مثال نہیں ملتی جنہوں نے انگریزوں کے دور میں مسلمانوں کو راستہ دکھایا کہ اگر انگریز قوم سے مقابلہ کرنا چاہتے ہو تو آپ انگلش زبان بولنے کی قوت پیدا کرو اور برصغیر میں ہندو ،مسلم ،سکھ ،عیسائی بھائی چارے کا پیغام دیا۔ مقررین نے سرسید کی ادبی زندگی پر بات کرتے ہوئے کہا کہ اگر علیگڑھ کی سر زمین پر یونیورسٹی جیسا ادارہ نہ ہوتا تو مسلمانوں کا چراغ بجھ گیا ہوتا۔ان کاکہناتھاکہ سر سید نے ادب، اخلاق، تہذیب اور انسانیت کو بچانے کے لئے اپنے نفس کی جنگ لڑی اور اپنے مشن میں کامیاب ہوئے اور آج ہندوستان کے علاوہ سارک میں آنے والے آٹھ ممالک کے طلبا بھی اسی ادارے سے مستفید ہورہے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ ڈگری کالج سرنکوٹ میں جل رہے چراغ بھی علی گڑھ یونیورسٹی کی ہی دین ہیں ۔اس موقعہ پر نظامت کے فرائض خلیق انجم نے انجام دیئے ۔آخر پرمہمانان حصوصی اور مہمانان ذی وقار کے ہاتھوں اعزازات تقسیم کئے گئے ۔