تازہ ترین

مزید خبرں

18 اکتوبر 2018 (00 : 01 AM)   
(      )

موسم سرما کی آمد

ضروریات زندگی وافر مقدار میں دستیاب رکھیں

نیشنل کانفرنس کی صوبائی انتظامیہ سے اپیل   

سرینگر// نیشنل کانفرنس کے جنرل سکریٹری علی محمد ساگر نے صوبائی انتظامیہ سے اپیل کی ہے کہ موسم سرما کے پیش نظر ضروریات زندگی کا وافر مقدار دستیاب رکھیں تاکہ عوام کو کسی بھی مشکلات کا سامنا نہ کرنا پڑے۔ انہوں نے کہا کہ رواں سال موسم سرما سے قبل ہی پہاڑی اور دور دراز علاقوں میں برفباری ہوئی ہے اور سردی کی لہر نے میدانی علاقوں کو بھی کو اپنی لپیٹ میں لے لیا ہے۔ انہوںنے مژھل ، ٹنگڈار ، کیرن، گریز ، مڑ، وڈون اور دچھن جیسے علاقوںکے علاقوں کو زبردست مشکلات کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔انہوں نے کہا کہ اِس صورتحال کے پیش نظر سرکار کو موثر اور کارگر اقدامات کرنے چاہئیں۔ اس دوران پارٹی کے سینئر لیڈران قمر علی آخون، سجاد احمد کچلو، کفیل الرحمان، نذیر احمد خان گریزی، ناصر خان اور الطاف احمد کلو نے بھی حکومت سے اپیل کی ہے کہ ان دور دراز علاقوں میں راستے بند ہونے سے قبل ہی ضروری سٹاک پہنچایا جائے ۔
 

آتشزدگی واردات کی روکتھام کیلئے ایڈوائزی جاری

سرینگر//موسم سرما کی آمد اور سردی میں اضافے کے ساتھ ہی سرکار نے ایڈوائزی جاری کرتے ہوئے لوگوں کو گھروں کو گرم رکھنے والے آلات اور بستیوں کے نزدیک پتے وغیرہ جلانے میں احتیاط برتنے کی اپیل کی تاکہ حادثات پر روکتھام پایا جا سکے ۔ کے این ایس کے مطابق وادی خشک موسم کے دوران سردیوں میں اضافے کے بعد اپنی نوعیت کی پہلی ایڈ وائزی جا ری کی گئی ہے جس میں لوگوں کو گھروں کو گرم رکھنے والے آلات کو معائنہ کرنے کے بعد بہترطریقے سے استعمال کرنے کی صلاح دی گئی ہے ۔ایڈوائزی میں لوگوں خاص کر دیہی علاقوںمیں بستیوں سے دور درختوں کے پتوں کو جلانے کے لئے کہا گیا ہے تاکہ آتشزدگی واردات پر قابو پایا جاسکے ۔
 

لولاب میں بجلی کی عدم دستیابی کے خلاف احتجاج

 اشرف چراغ 
 
کپوارہ// لولاب کے سیور ٹھنڈی پورہ میں بجلی کی عدم دستیابی کے خلاف لوگوں نے بدھ کو احتجاج کیا ۔احتجاجی مظاہرین نے بتایا کہ علاقہ گزشتہ 5 مہینوں سے بجلی سپلائی سے محروم ہے۔مقامی لوگوں کی ایک بڑی تعداد جن میں مرد وزن شامل تھے، نے سیور ٹھنڈی پورہ میں احتجاج کرتے ہوئے کہاکہ علاقہ میں 5 مہینہ قبل بجلی ٹرانسفارمر خراب ہوچکا ہے لیکن آج تک اُس کی مرمت نہین کی گئی۔لوگوں کا کہنا ہے کہ کئی بار محکمہ بجلی سے رجوع کیا گیالیکن معاملہ حل نہیں ہواجس کی وجہ سے سیور ٹھنڈی پورہ شام ہوتے ہی گھپ اندھیرے میں ڈوب جاتا ہے۔انہوں نے بتایا کہ اب بچوں کے سالانہ امتحانات بھی شروع ہو رہے ہیں لیکن بجلی کی سپلائی بحال نہیں ہورہی ہے جس کی وجہ سے طالب علموں کو مشکلات کا سامنا کرنا پڑ تا ہے۔احتجاجی مظاہرین نے مطالبہ کیا کہ ٹرانسفار مر کو فوری طور ٹھیک کر کے علاقہ میں نصب کیا جائے ۔
 

منیگام اورزیری پورہ سڑکوں کی حالت خستہ

کلن علاقے میں بجلی کا ترسیلی نظام ناقص

ارشاد احمد+غلام نبی رینہ
گاندربل+کنگن//منیگام درپورہ سے درسومارابطہ سڑک کی خستہ حالت کے نتیجے میں آمد ورفت میں سخت دشواریاں پیش آتی ہیں ۔جگہ جگہ سڑک پر موجود پرانا میکڈم اکھڑ چکا ہے جس کے نتیجے میں جگہ جگہ کھڈ بن چکے ہیں ۔مقامی باشندوں کے مطابق کئی سال بیت گئے جب اس سڑک پر تارکول بچھایا گیا تھا۔شرجیل احمد راتھر نامی ایک شہری نے بتایا کہ درپورہ سے درسوما سڑک کی حالت انتہائی خستہ ہوچکی ہے اور لوگوں کو چلنے پھرنے میں دشواریاں پیش آتی ہیں۔تحصیل گنڈ کے زیری پورہ کلن سے ریزن تک سڑک کی حالت انتہائی خستہ ہونے کے نتیجے میںلوگوں کو سخت مشکلات در پیش ہیں جبکہ علاقے میں بجلی کا ترسیلی نظام بھی ناقص ہے ۔ زیری پورہ کلن کے لوگوںنے کشمیر عظمیٰ کو بتایا کہ ریزن تک سڑک کی حالت انتہائی خستہ  ہے ،جس کے نتیجے میں لوگوں کو سخت مشکلات کا سامنا کرنا پڑتا ہے ۔غلام محمد نامی ایک شہری نے بتایا کہ انہوں نے کئی بار متعلقہ حکام سے مطالبہ کیا کہ اس سڑک پر میکڈم بچھانے کیلئے اقدامات کئے جائیں تاکہ لوگوں کو موسم سرما کے دوران مشکلات کا سامنا نہ کرنا پڑے تاہم کوئی توجہ نہیں دی گئی ۔ محمد سلطان نامی ایک اور شہری نے بتایا کہ گاندربل میں ایک عوامی دربار کے دوران انہوں نے گذشتہ ماہ سڑک کی خستہ حالی،بجلی اور دیگر مطالبات گورنر کے مشیر خورشید احمد گنائی کی نوٹس میں لائے اور مشیر موصوف نے یقین دلایا کہ ان کے مطالبات کو حل کرنے کے لئے ضلع انتظامیہ کو ہدایت دی جائے گی ۔ مقامی لوگوں کا کہنا ہے کہ علاقے میں ترسیلی لائن بجلی کھمبوں کے بجائے درختوں سے لٹکی ہوئی ہے جس کے باعث کبھی بھی کوئی بڑا حادثہ رونما ہوسکتا ہے ۔ انہوں نے مطالبہ کیا کہ علاقے میں ترسیلی نظام کو بہتر بنانے کے لئے اقدامات کئے جائیں تاکہ لوگوں کو مزید مشکلات کا سامنا نہ کرنا پڑے۔ 
 

 رام نومی پر ویاس اور ڈاکٹر فاروق کی لوگوں کو مبارکباد

سرینگر//گورنر کے مشیر بی بی ویاس نے رام نومی کے موقعہ پر ریاستی عوام کو مبارک باد دی ہے۔ انہوں نے اُمید ظاہر کی کہ یہ تہوار ریاست میں ترقی اور خوشحالی کی نوید لے کر آئے گا۔نیشنل کانفرنس صدر ڈاکٹر فاروق عبداللہ نے مہانومی اور دسہرا پر ہندو برادری خاصکر کشمیری پنڈتوں کو مبارکباد پیش کرتے ہوئے کہا ہے کہ تمام مذاہب انسانی بھائی چارے کا درس دیتے ہیں اور آپسی محبت کو مستحکم بنانے کی راہیں دکھاتے ہیں۔ انہوں نے اُمید ظاہر کی کہ عنقریب ہمارے سماج کو اپنی دیرینہ روایات پھر سے بحال کرنے کا موقعہ ملے گا۔ ادھر پارٹی کے صوبائی صدرجموں دویندر سنگھ رانا، پارٹی لیڈران ایم کے یوگی اوررتن لعل گپتا نے بھی مہا نومی پرعوام کو مبارکباد پیش کرتے ہوئے کہا ہے کہ مذہبی تہوار انسانیت، اخوت، بھائی چارہ اور فرقہ وارانہ ہم آہنگی کا درس دیتے ہیں۔
 

مسرور عباس سنٹرل جیل سے رہا

سرینگر// حریت(ع) کے سینئر لیڈر اور اتحاد المسلمین کے صدر مولانا مسرور عباس انصاری کو کئی دنوں تک مقید رکھنے کے بعد بدھ کو رہا کیا گیا۔مولانا مسرور کو بلدیاتی انتخابات کے دوسرے مرحلے کے دوران حراست میں لیا گیا تھا اور انہیں کئی روز تک سرینگر کے سینٹرل جیل میں نظر بند رکھا گیا۔اس دوران بدھ کو انکی رہائی ہوئی،جس کے دوران سنٹرل جیل سرینگر کے باہر انکے حامی اور کارکن انکا انتظار کر رہے تھے،جس کے بعد انہیں نعروں کی گونج میں گھر پہنچایا گیا۔اس موقعہ پر مولانا مسرور عباس انصاری نے لوگوں اور کارکنوں کا شکریہ ادا کرتے ہوئے انہیں بلدیاتی انتخابات کا بائیکاٹ کرنے پر شکریہ ادا کیا۔ انہوں نے یہ عزم پھر دہرایا کہ حصول مقصد تک جدوجہد جاری رکھی جائے گی۔مسرور عباس انصاری نے کہا کہ انتخابات میں لوگوں کی شرکت بھارت اور اقوام عالم کیلئے چشم کشا ہے اور95فیصد لوگوں نے ان انتخابات سے دوری بنا کر واضح پیغام دیا۔
 

گاندربل میں میگا میوٹیشن کیمپ کاانعقاد

گاندربل//منی سیکریٹریٹ گاندربل میں ترقیاتی کمشنر ڈاکٹر پیوش سنگلا کی صدارت میں ایس آر او 367سال2015کے تحت زبانی تحائف سے متعلق ایک میگا میوٹیشن کیمپ کا انعقاد کیا گیا ۔کیمپ میں 9معاملات پیش کئے گئے جن کا تفصیلی جائزہ لیا گیا اورتمام معاملات کو منظوری دی گئی۔اس موقعہ پر اے سی آر گاندربل اورتحصیلدار ہیڈ کوارٹر بھی موجود تھے۔ترقیاتی کمشنر نے افسران پر تندہی اورفرض شناسی کے ساتھ کام کرنے پر زوردیا تاکہ بہتر عوامی خدمات کی فراہمی یقینی بن سکے۔
 
 

ایس ایف سی کے کام کاج کو وسعت دینے پر پرنسپل سیکرٹری خزانہ کا زور 

سر ی نگر//پرنسپل سیکرٹری خزانہ نوین کمار چودھری نے سٹیٹ فائنانس کارپوریشن کے کام کاج کو وسعت دینے پر توجہ مرکوز کرنے کی ضرورت پر زور دیا ہے۔ نوین کمار چودھری ان خیالات کا اظہار کارپوریشن کے بورڈ آف ڈائریکٹر کی 239 ویں میٹنگ کی صدارت کے دوران کیا۔ میٹنگ میں کارپوریشن کے تمام ممبران اور ڈائریکٹر بجٹ امتیاز وانی کے علاوہ محکمہ خزانہ کے افسران بھی موجودتھے۔نوین کمار چودھری نے بورڈ آف ڈائریکٹر س کے ممبران سے مخاطب ہوتے ہوئے کہا ’’ میں بورڈ کی چیرمین کی حیثیت سے آپ کو یہ اختیار دیتا ہوں کہ آپ لوگ کوئی بھی ایسا فیصلہ لیں جو ادارے کی بھلائی کے حق میں ہو ۔ حکومت ایس ایف سی کو ایک مستحکم مالی ادارہ بنانے کے عزم پر قائم ہے‘‘ ۔ نوین کمار چودھری نے کہا کہ حکومت سٹیٹ فائنانس کارپوریشن کو مزید مستحکم بنانے اور اس کام کاج میں مزید وسعت لانے کی غرض سے تمام وسائل بروئے کار لائے گی۔ انہوں نے کارپوریشن کے ریکارڈ کو کمپیوٹررائز کرنے کے لئے ایک کروڑ روپے اور وی آر ایس واجبات ادا کرنے کے لئے 25لاکھ روپے واگزار کرنے کی فائنانس ڈیپارٹمنٹ کو ہدایت دی ۔بورڈ کی گزشتہ میٹنگ میں لئے گئے فیصلوں پر عمل درآمد کا بھی آج کی میٹنگ میں جائزہ لیا گیا۔ میٹنگ میں کارپوریشن کی اپریل 2018ء سے ستمبر 2018ء تک کی کارکردگی کا تفصیل سے جائزہ لیاگیا۔میٹنگ میں قرضوں سے کئی معاملات کے نمٹارے پر بھی غور و خوض کیا گیا۔
 

کشمیریوں کا قتل عام کرنا فورسز کا مشغلہ:صحرائی

سری نگر // تحریک حریت کے چیئرمین محمد اشرف صحرائی نے فتح کدل سرینگر میں جان بحق جنگجوئوں اور عام شہری ہلاکتوں پر شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے کہا کہ جموں کشمیر میں کشمیریوں کو قتل کرنا فورسز کا مشغلہ بن گیا ہے .۔ معراج الدین بنگرو اور محمد مشتاق وازہ اور ملاک مکان کے جواں سال بیٹے رئیس احمد کو گولی مار کر قتل کئے جانے پر اپنے گہرے رنج و غم کا اظہار کرتے ہوئے صحرائی نے کہا کہ جموں کشمیر میں فورسز کی طرف سے آگ اور خون کا کھیل کھیلا جا رہا ہے۔کشمیریوں کا قتل عام کرنا اور املاک کونذ آتش کرنا فورسز کا مشغلہ بناہوا ہے ۔انہوں نے کہاکہ بھارت کے حکمران اور پالیسی اداروں کو دھونس و دباو ظل و جبر اور فوجی طاقت کی پالیسی کو ترک کرنا ہوگا ۔اس دوران انہوں فتح کدل واقعے میں جان بحق ہوئے تمام افراد کو شاندار الفاظ میں خراج عقیدت پیش کیا ہے ۔
 

قید و بند کا بڑھتا سلسلہ تشویشناک :فرنٹ 

سرینگر// لبریشن فرنٹ وادی بھر میں گرفتاریوں کے نئے چکر،سیاسی اراکین پر پی ایس اے لگاکر انہیں بیرون وادی جیلوں میں منتقل کردینے کے بڑھتے ہوئے سلسلے کی مذمت کرتے ہوئے لبریشن فرنٹ نے کہا کہ نوگام پولیس کل شام سے لبریشن فرنٹ کے ایک دیرینہ رکن معراج الدین پرے سوٹینگ کے خلاف چھاپہ ماری کررہی ہے۔ پولیس نے اس سیاسی رکن کا اسکوٹر بھی ضبط کرکے تھانے میں منتقل کردیا ہے اور یوں اس کے خلاف گویا ایک جنگ چھیڑ دی گئی ہے۔ اس پولیسی جبر و زیادتی کو صریح سرکاری دہشت گردی سے تعبیر کرتے ہوئے لبریشن فرنٹ نے اس کی بھی سخت الفاظ میں مذمت کی ہے۔ یہ بات واضح رہے کہ لبریشن فرنٹ کے چیئرمین محمد یاسین ملک جنہیں پولیس نے اس ۲، اکتوبر کے روز گرفتار کیا تھا ہنوز فرنٹ کے زونل صدر نور محمد کلوال کے ہمراہ تھانہ کوٹھی باغ میں مقید ہیں جبکہ دوسرے اراکین جن میں سراج الدین میر، ظہور احمد بٹ، عبدالرشید مغلو، اسد اللہ شیخ ،غلام نبی کشمیری وغیرہ جموں کے مختلف جیلوں میں پی ایس اے کے تحت نیز شیخ نذیر احمد عمر قید کی سزا میں کورٹ بلوال جیل میں مقید ہیں۔لبریشن فرنٹ ان گرفتار شدگا کی اسیری کو طول دینے کی پولیسی کاروائیوں کی بھی سخت مذمت کرتی ہے۔
 

 محکمہ بجلی کے افسران کی میٹنگ 

سکیموں کی بروقت تکمیل پر ویاس کازور 

سرینگر//گورنر کے مشیر بی بی ویاس نے ایک اعلیٰ سطحی میٹنگ میں محکمہ بجلی کے کام کا جائیزہ لینے کے علاوہ اس سلسلے میں عوامی درباروں کے دوران اُن کی نوٹس میں لائے گئے مسائل پر کی گئی کاروائی کے بارے میں تفصیلات طلب کیں ۔ میٹنگ میں کمشنر سیکرٹری بجلی ہردیش کمار ، چیف انجینئر جموں /کشمیر بھی موجود تھے ۔ مشیر موصوف کو ریاست میں بجلی کی موجودہ صورتحال کے بارے میں تفصیلی جانکاری دی گئی ۔ انہیں ریاست میں عملائی جا رہی مختلف بجلی سکیموں کے بارے میں بھی بتایا گیا ۔ محکمہ بجلی کی وساطت سے عملائی جا رہی مختلف فلیگ شپ سکیموں کی جلد از جلد تکمیل پر زور دیتے ہوئے مشیر موصوف نے کہا کہ اس سلسلے میں ایک موثر میکنزم اپنایا جانا چاہئیے تا کہ ان سکیموں پر آنے والے خرچے میں کوئی اضافہ نہ ہو ۔ انہوں نے کہا کہ ان سکیموں کی تکمیل سے ریاست بجلی کی پیداوار میں خود کفیل بننے کے ساتھ ساتھ ترسیلی نظام میں بہتری آئے گی اور صارفین کو مزید سہولیات ملیں گی ۔ بی بی ویاس نے افسران سے تلقین کی کہ وہ آنے والے موسمِ سرما کے دوران بجلی کی مناسب دستیابی کو یقینی بنائیں ۔ مشیر نے محکمہ بجلی میں کام کر رہے ملازمین کو درپیش مسائل کا بھی جائیزہ لیا ۔ انہوں نے ملازمین کے مسائل حل کرنے پر زور دیا ۔
 

جسٹس ہانجورہ کے اعزاز میں الوداعیہ کا اہتمام

سر ی نگر//جسٹس ایم کے ہانجورہ کے اعزاز میں ریاستی ہائی کورٹ کی طرف سے الوداعیہ کا اہتمام کیا گیا۔ تقریب میں چیف جسٹس ، جسٹس گیتامِتل ، جسٹس آلوک ارادھے ، جسٹس علی محمد ماگرے ، جسٹس تاشی ربستن ، جسٹس رشید علی ڈار، ایڈوکیٹ جنرل ڈی سی رینہ ، ریٹائرڈ جسٹس بشیر احمد کرمانی ، ریٹائرڈ جسٹس حسنین مسعودی ، ڈپٹی ایڈوکیٹ جنرلز ، رجسٹر ار جوڈیشنل اکیڈیمی ایم وائی وانی ، پرنسپل ڈسٹرکٹ جج سری نگر محمد اکرم چودھری ، لأ سیکرٹری عبدالمجید اور رجسٹری اور بار کے ممبران نے شرکت کی۔ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے ایڈوکیٹ جنرل نے جسٹس ہانجورہ کے دورمیں دئیے گئے فیصلوں اور انصاف کی فراہمی میں ان کے رول کو اُجاگر کیا ۔جسٹس ہانجورہ نے ایڈوکیٹ جنرل کا شکریہ ادا کرتے ہوئے ہائی کورٹ میں اُن کے دور میں بار ممبران کی طرف سے پیش کئے گئے تعاون پر بھی اُن کا شکریہ ادا کیا۔
 

پولیس پنچائتی انتخابات کے پرامن انعقاد کیلئے تیار

پولیس سربراہ کی عوام کے ساتھ ہمدردانہ رویہ اختیار کرنے کی اہلکاروں کو ہدایت

 سرینگر //  امن دشمن عناصر اور منشیات فروشوں کے خلاف سخت کارروائی کرنے کے ساتھ ساتھ عام لوگوں کے ساتھ ہمدردانہ سلوک اختیار کیا جائے۔ ان باتوں کا اظہار ڈائریکٹر جنرل پولیس دلباغ سنگھ نے یہاں پونچھ اور راجوری کے دورے کے دوران کیا۔ اس دوران ڈی جی پی نے اعلیٰ افسران  کے ساتھ سیکورٹی انتظامات کے سلسلے میں تبادلہ خیال کرنے کے علاوہ پولیس درباروں سے بھی خطاب کیا۔ اس موقعہ پر خطاب کرتے ہوئے ڈی جی پی نے کہا  جموں وکشمیر پولیس پنچایتی الیکشن کو احسن اور پرامن طریقے سے منعقد کرانے کیلئے تیار ہے اور اس سلسلے میں سیکورٹی کے موثر انتظامات کئے جائیں گئے۔  اس کے ساتھ ساتھ ڈی جی پی نے بلدیاتی انتخابات کو خوش اسلوبی کے ساتھ منعقد کرانے کیلئے افسران اور اہلکاروں کی سراہنا کی۔ سرینگر آپریشن کا ذکر کرتے ہوئے ڈی جی پی نے کہا کہ جموں و کشمیر  پولیس کے اہلکاروں اور افسراں نے دیگر فورسز ایجنسیوںکے ساتھ مل کر اس آپریشن کو کامیابی کے ساتھ انجام دیا ۔انہوں نے کہا کی اُبھرتی صورتحال کو بہت ہی جلد اور موثر اندازسے سنبھالاگیا۔  ڈی جی پی نے افسران اور جوانوں پر زور دیا کہ وہ آنے والے پنچایتی الیکشن کو احسن اور پرامن طریقے سے منعقد کرانے کیلئے ہر ممکن سیکورٹی انتظامات کو بروئے کار لائیں۔ڈی جی پی  نے امن دشمن عناصر کے خلاف سخت کارروائی کرنے کے ساتھ ساتھ عام لوگوں کے ساتھ ہمدردانہ سلوک اختیار کرنے کے بارے میں احکامات بھی جاری کئے۔ اس کے علاوہ منشیات کا خاتمہ کرنے کیلئے  ڈی جی پی نے منشیات فروشوں کے خلاف سخت کاروائی عمل میں لانے پر بھی زور دیا۔پولیس سربراہ نے ریاستی حکومت کے اس فیصلے کاخیرمقدم کیا جس کے تحت سرکار نے محکمہ پولیس میں 8531  این جی اوز  نان گزیٹڈ اسامیوں  کے معرض وجودمیں لانے کے احکامات جاری کئے  ۔ڈی جی پی نے کہا کہ ڈی پی سیز (DPCs) کو ہنگامی بنیادوں پر مکمل کرنے کے بارے میں  پولیس ہیڈ کواٹر نے پہلے ہی ا حکامات جاری کئے ہیں۔ڈی جی پی نے کہا کہ افسران اور جوانوں کی فلاح وبہبود کیلئے ہر ممکن کوششیںکی جارہی ہیں۔
 

ریاست میں خواتین کے30500 سیلف ہیلپ گروپ قائم

سرینگر//سٹیٹ رورل لائیولی ہُڈمشن ( ایس آر ایل ایم ) کے ڈائریکٹر عبدالرشید وار نے کہا کہ ریاست میں اب تک خواتین کے 30500 سیلف ہیلپ گروپ قایم کئے گئے ہیں ۔ ڈائریکٹر موصوف نے یہ جانکاری اقتصادی جانکاری کی عمل آوری سے متعلق ایک ورکشاپ کا افتتاح کرنے کے موقع پر دی ۔ اس موقعہ پر انہوں نے کہا کہ پردھان منتری جن دھن یوجنا ، پردھان منتری جیون جیوتی بیمہ یوجنا ، پردھان منتری سرکھشا بیمہ یوجنا ، اٹل پینشن یوجنا اور مُدرا جیسی مالی سکیمیں سماج کے غریب طبقے کی فلاح و بہبود پر مرکوز ہیں اور سیلف ہیلپ گروپوں کو ان سکیموں کی وسیع جانکاری دینا لازمی ہے تا کہ ان سکیموں کے اہداف حاصل کئے جا سکیں ۔ انہوں نے کہا کہ اس قسم کے ورکشاپ جموں میں بھی منعقد کئے جائیں گے ۔ ڈائریکٹر موصوف نے تجویز دی کہ سماج کے غریب اور پچھڑے طبقے کو اقتصادی جانکاری فراہم کی جانی چاہئیے تا کہ وہ ترقیاتی سکیموں سے استفادہ کر سکیں ۔ اس موقعہ پر آر یو ڈی ایس ای ٹی آئی کی نیشنل اکیڈمی کے ڈائریکٹر جنرل آر آر سنگھ ، ایڈیشنل مشن ڈائریکٹر کشمیر رفعت آفتاب ، دیہی ترقی کی مرکزی وزارت کے سینئر حکام اور دیگر کئی افسران موجود تھے ۔ 
 

نالہ رمبی آرہ سے ریت بجری نکالنے پر پابندی

۔20گاڑیاں نالے سے غیرقانونی طور ریت بجری نکالتے ہوئے ضبط

شاہد ٹاک
 
شوپیان//نالہ رمبی آرہ شوپیان سے غیر قانونی طور ریت اور بجری نکالنے والوں کیخلاف کارروائی کے دوران بدھ کوانتظامیہ نے 20گاڑیاں ضبط کیں جن میں ٹپر،ٹریکٹر اور ٹرک شامل ہیں۔ان باتوں کااظہار ضلع ترقیاتی کمشنر شوپیان نے ایک میٹنگ کی صدارت کرتے ہوئے کیا۔انہوں نے کہا کہ نالہ رمبی آرہ سے ریت اور بجری نکالنے پر پابندی عائد ہے اورجو کوئی اس کی خلاف ورزی کرتے پایا جائے گا اس کے خلاف قانونی کارروائی کی جائے گی۔ضلع ترقیاتی کمشنر نے کہا کہ نالہ رمبی آرہ سے غیرقانونی اور غیر سائنسی طور ریت اور بجری نکالنے والوں پر نگاہ رکھنے کیلئے خصوصی کمیٹیاں تشکیل دی گئی ہیں ۔انہوں نے کہا کہ جس کسی کوبھی اس نالہ سے ریت بجری نکالتے ہوئے پایا جائے گا اُس کا سامان اور دیگر آلات وگاڑیاں ضبط کی جائیں گی۔انہوں نے کہا کہ پلوں کے قریب ریت بجری نکالنے سے پلوں کو خطرہ لاحق ہوتا ہے اور غیر سائنسی اور غیرقانونی طور ریت بجری نکالنے سے آبی ذخائر اور ندی نالوں کے کناروں کو سخت نقصان پہنچتا ہے ۔انہوں نے لوگوں سے بھی اپیل کی کہ وہ اگر کسی کو اس نالے سے غیرقانونی طور ریت بجری نکالتے ہوئے دیکھ لیں تو انتظامیہ کو مطلع کریں۔
 

بانڈی پورہ میں محکمہ فوڈ اینڈ سپلائز کے اہتمام سے تقریب

عازم جان
 
بانڈی پورہ//کانفرنس ہال منی سیکریٹریٹ بانڈی پورہ میں ورلڈ فوڈ ڈے کی مناسبت سے محکمہ فوڈ اینڈ سپلائر کے اہتمام سے تقریب منعقد ہوئی جس میں اسکولی بچوں کے علاوہ ضلع افسران اور لوگوں کی بڑی تعداد نے شرکت کی۔ تقریب کی صدارت ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر بانڈی پورہ ظہور احمد میر نے کی جبکہ فوڈ اینڈ سپلائر بانڈی پورہ کے اسٹنٹ ڈائریکٹر فیاض احمد شاہ اور تحصیل سپلائی آفیسر بشیر احمد بٹ مہمان خصوصی تھے ۔اس دوران مقررین نے اس دن کی اہمیت کو اجاگر کرتے ہوئے کہا کہ اس وقت دنیا کے کافی ممالک میں غذائی اجناس کی کافی کمی پائی جاتی ہے جس پر قابو پانے کے لئے اصلاحات کی اشد ضرورت ہے۔ اسٹنٹ ڈائریکٹر فوڈ اور سپلائی آفیسر بشیر احمد بٹ نے کہا کہ ہمارے ملک میں بھوک مٹانے کے لیے اصلاحات کئے جاتے ہیں اور ان اصلاحات کی بدولت 2030 تک ہم بھوک مٹاسکتے ہیں۔
 

والٹنگو میں تین روزہ 

ڈیزاسٹر منیجمنٹ پروگرام شروع

کولگام//کولگام ضلع کے دورافتادہ گائوں والٹنگو میں تین روزہ ڈیزاسٹرمنیجمنٹ پروگرام شروع ہوا۔پروگرام کے دوران تقریباً50رضاکاروں کو تربیت دی گئی۔پروگرام کا اہتمام ڈیزاسٹرمنیجمنٹ اتھارٹی کولگام نے سٹیٹ ڈیزاسٹر منیجمنٹ اتھارٹی کے تعاون سے کیا۔پروگرا م کے دوران ایس ڈ ی آر ایف اورسول ڈیفنس کے ماہرین کی ٹیم نے رضاکاروں کو فسٹ ایڈ،آگ سے بچائو اور تحفظ کے بارے میں تربیت دی۔جب کہ زلزلے سے بچائو کے بارے میں تیاریوں،فلڈ منیجمنٹ اورپسیاں گر آنے کے نتیجہ میں بچائو اقدامات کے حوالے سے بھی رضاکاروںکو تربیت فراہم کی گئی۔یہ امر قابل ذکر ہے کہ والٹنگو ناڑ میں تودے گر آنے کا اندیشہ رہتا ہے اورجنوری2005ء کے دوران یہاں تودوں کی زد میںآنے سے کئی اموات ہوئیں۔اے ڈی سی غلام حسین شیخ نے آفات سماوی کے خطرات سے لاحق علاقوں کے لوگوں کو آفات کا مقابلہ کرنے کے لئے اُن میں یہ صلاحتیں پیدا کرنے کی ضرورت پر زوردیا۔
 

پرنسپل سیکرٹری ہیلتھ کی صدارت میں سٹیٹ ہیلتھ سوسائٹی کی میٹنگ  

سر ی نگر//صحت و طبی تعلیم محکمہ کے پرنسپل سیکرٹری اَٹل ڈولو کی صدارت میں سٹیٹ ہیلتھ سوسائٹی ایگزیکٹیو کمیٹی کی میٹنگ منعقد ہوئی ۔ میٹنگ میں اُن فیصلوں پر عمل درآمد جائزہ لیا گیا جو فیصلے کمیٹی کی پچھلی میٹنگ میں لئے گئے تھے۔میٹنگ میں فیصلہ لیا گیا کہ جے کے ایم ایس سی ایل موبائل بلڈ کلیکشن اینڈ ٹرانسپورٹیشن وہیکلز کی حصولیابی کا عمل جلد از جلد مکمل کرے گا اور اس سلسلے میں ریٹ کنٹریکٹ کو حتمی شکل دی جانی چاہئے۔پرنسپل سیکرٹری نے دُور دراز علاقوں میں تعینات ڈاکٹروں کی پرفارمنس کا بھی جائزہ لیا۔ اُنہوں نے بنیادی نوعیت کے طبی اداروں میں مناسب عملہ تعینات کرنے پر زور دیا تاکہ ان اداروں میں مریضوں کے رَش کے ساتھ نمٹاجاسکے۔اُنہوں نے ان اِداروں میں تمام بنیادی سہولیات دستیاب رکھنے پر بھی زور دیا۔میٹنگ میں این ایچ ایم کے مشن ڈائریکٹر بھوپندر کمار ، ایم ڈی جے کے ایم ایس سی ایل اِندر جیت ، ڈائریکٹر آئی ایس ایم نیرج کمار ، پرنسپل گورنمنٹ میڈیکل کالج سری نگر صائمہ رشید ، ڈائریکٹر فیملی ویلفیئر ڈاکٹر سمیر مٹو،ناظم صحت کشمیر ڈاکٹر کنزس ڈولما ، ڈپٹی ڈائریکٹر ہیلتھ سروسزجموں ڈاکٹر چندر پرکاش اور سٹیٹ ہیلتھ سوسائٹی کے پروگرام منیجروں کے علاوہ دیگر کئی عہدہ داربھی موجود تھے۔
 

صارفین بجلی کامنصفانہ استعمال کریں

چیف انجینئر پی ڈی ڈی کشمیر کی اپیل

سرینگر//چیف انجینئر پی ڈی ڈی کشمیر نے وادی میں بجلی کی بلا خلل اورباقاعدہ سپلائی کو یقینی بنانے کے لئے صارفین پر بجلی کا کفایت شعاری اور منصفانہ استعمال پر زوردیا ہے ۔انہوںنے صارفین سے کہا ہے کہ وہ شام کے اوقات خصوصاً 6بجے سے رات10بجے تک ہیٹنگ آلات کا استعمال کرنے سے پرہیز کریں کیونکہ اس طرح بجلی کے نظام پر دبائو بڑھنے سے بجلی کی کٹوتی ناگزیر بن جاتی ہے۔انہوںنے کہا کہ بجلی کی بلا خلل سپلائی اگرچہ ہر صارف کا حق ہے تاہم صارفین پر بھی یہ لازم ہے کہ وہ بجلی کا منصفانہ استعمال کریں تاکہ محکمہ بجلی کی کٹوتی پر مجبور نہ ہوجائے۔