تازہ ترین

مزید خبرں

12 اکتوبر 2018 (00 : 01 AM)   
(      )

نوگام قتل معاملہ

عدالت نے ملزمان کیخلاف فرد جرم عائد کی

مدثریعقوب
 
سرینگر//خواجہ پورہ نوگام کے آبروشفیع بٹ کے قتل معاملے میں عدالت نے یہاں دوملزموں کیخلاف فردجرم عائدکی ۔ملزموں میں مقتول کی اہلیہ آصفہ حوریہ جان اوراُس کاعاشق مولوی تنویراحمدبٹ ساکن للہارپلوامہ شامل ہیں۔ٖاستغاثہ اور وکیل دفاع کے دلائل سننے کے بعد سیکنڈایڈیشنل سیشن جج طاہرخورشیدرینہ نے کہا کہ عدالت میں پیش کئے گئے ریکارڈ سے ظاہر ہوتا ہے کہ پولیس نے تفصیلی تحقیقات کی ہے اورملزموں کوجرم سے جوڑ دیا ہے۔جج نے کہا کہ میں مطمئن ہوں کہ بادی النظرمواد سے امکان ہے کہ ملزموں نے متوفی کا10مئی2018کی رات کو گلاگھونٹ کر ماردیاہے۔اس لئے انہیں قتل اور مجرمانہ سازش کیلئے دفعہ302,120-B RPCکے تحت فردجرم عائدکی گئی ۔عدالت نے کہا کہ ملزموں نے پولیس کو متوفی کو قتل کرنے کا طریقہ تفصیل سے ظاہر کیا اور پولیس نے اس جرم کو انجام دینے کیلئے ملزموں کی طرف سے استعمال کئے گئے بیہوشی کے ادویات بھی برآمد کئے ۔عدالت نے مزید یہ بھی کہا کہ طبی شواہد سے استغاثہ کی کہانی کی تائید ہوتی ہے۔ عدالت کا یہ بھی کہنا ہے کہ استغاثہ اور دفاع نے شاہدوں کے بیانات پڑھے اور جو بیان پولیس تحقیقات کے دوران ریکارڈ کئے گئے۔اُن سے ملزموں کا جرم سے تعلق ظاہر ہوتا ہے۔الیکٹرانک ثبوتوں سے بھی ملزموں کے درمیان نزدیکی ظاہر ہوتی ہے ،جس کی دیگر شواہد سے بھی تائید ہوتی ہے۔جج نے کھلی عدالت میں ملزموں کوفردجرم پڑھ کر سنایا۔ملزموں نے خود کو بے قصور قرار دیتے ہوئے عدالتی کارروائی کو ترجیح دی۔کیس کی اگلی سماعت 29اکتوبر2018کو ہوگی ۔
 
 
 

 مولوی اسد اللہ دار کی وفات پر میرو اعظ کا اظہار رنج و غم

سرینگر//عوامی مجلس عمل کے سربراہ و حریت(ع) چیرمین میرواعظ محمد عمر فاروق نے مرکزی جامع مسجد سرینگر کے سابق امام سرکردہ ادیب ،محقق اور شاعر مولوی اسد اللہ دار سکونت بژھ پورہ جن کی میرواعظ خاندان کے ساتھ قرابت بھی رہی ہے، کے انتقال پر گہرے دکھ اور صدمے کا اظہار کیا ہے۔ میرواعظ نے مرحوم مولوی اسد اللہ دار جو اسلامیہ اورینٹل کالج سرینگر کے فیض یافتہ اور ایک معروف عالم دین تھے جنہوں نے اردو، عربی اور فارسی میں کئی گرانقدر کتابیں بھی تحریر کی ہیں اور سینکڑوں مقالے اور مضامین قلمبند کئے ہیں کے انتقال کو ذاتی صدمہ قرار دیتے ہوئے مرحوم کے لواحقین اور دار خاندان کے ساتھ دلی تعزیت کا اظہار کرتے ہوئے مرحوم کی مغفرت اور جنت نشینی کیلئے خصوصی دعا کی۔
 

کرالہ کھڈ میں قائم چنائو مرکز

فورسز پر سکول کو نقصان پہنچانے کا الزام

سرینگر //ہندو ہائی سکول کرالہ کھڈ کے منتظمین نے الزام عائد کیا ہے کہ بد ھ کوالیکشن دیوٹی پر تعینات عملہ اور فورسز اہلکاروں نے سکول کی جائیداد کو نصان پہنچایا ہے۔ سکول کے پرنسپل محمدایوب نے بتایا کہ منگل کی شام سکول انتظامیہ نے پولنگ بوتھوں کیلئے 6کمرے خالی کرکے دئے اور بدھ کو انتخابات ختم ہونے کے بعدجب جمعرات کوسکول کھولا گیا تو کئی کمروں کے تالے توڑے گئے تھے اور سامان کو تہس نہس کیا گیا تھا ۔انہوں نے بتایا کہ مذکورہ سکول میں انتخابات کے دوران اکثر اوقات پولنگ اسٹیشین قائم کئے جاتے ہیں اور ہرمرتبہ سکول کے املاک کو نقصان پہنچایا جاتا ہے۔انہوں نے بتایا کہ سکول کے تالے توڑنے اور سامان تہس نہس کرنے کی تحریری شکایت متعلقہ تھانے میں درج کرائی مگر پولیس نے کوئی کاروائی نہیں کی۔انہوںنے محکمہ تعلیم کے اعلیٰ افسران سے اپیل کی ہے کہ معاملہ کا سنجیدہ نوٹس لیں۔