تازہ ترین

سیلنگ کے لئے پیشگی نوٹس ضرور ی نہیں : سپریم کورٹ

12 اکتوبر 2018 (00 : 01 AM)   
(      )

نئی دہلی//سپریم کورٹ نے راجدھانی دہلی میں سیلنگ پر کسی طرح کی راحت کا اشارہ دے ئے بغیر کہاکہ غیرقانونی اور ناجائز تعمیرات کی سیلنگ کے لئے پیشگی نوٹس دے ئے جانے کی کوئی ضرورت نہیں ہے ۔ عدالت عظمی نے مرکزی حکومت سے اس اصول کو ختم کئے جانے پر جواب مانگا ہے جس کے حساب سے سیلنگ کرنے کے 48گھنٹے پہلے نوٹس دیا جاناضروری ہے ۔ جج مدن بی لوکر کی صدارت والی بنچ نے 27ہزار سے زیادہ غیرقانونی اور آلودگی پھیلانے والی فیکٹروں کو بند کرنے کا بھی حکم دیا۔ خیال رہے کہ گزشتہ سات ستمبر کو عدالت عظمی نے مرکزی حکومت کے ذریعہ قائم کردہ ایس ٹی ایف کو آڑے ہاتھوں لیتے ہوئے کہا تھا کہ لگتا ہے کہ ان پر دباو ہے ، خاص طورپر کاروباریوں کا۔ عدالت نے سخت ناراضگی ظاہر کرتے ہوئے کہاتھا کہ دہلی سے ممبئی نہیں بلکہ کنیاکماری تک کی دوری کا یہ ناجائز قبضہ ہے ۔ جج لوکر نے حکومت سے یہ یقینی بنانے کیلئے کہا کہ جہاں بھی رہائشی علاقوں میں غیرقانونی طریقے سے صنعتی یونٹیں چلائی جارہی ہیں انہیں پندرہ دنوں کے اندر سیل کیا جائے ۔یو این آئی