تازہ ترین

مزید خبرں

11 اکتوبر 2018 (00 : 01 AM)   
(      )

۔315ترقیاتی منصوبوں کیلئے815کروڑ روپے 

اعلیٰ اختیاری کمیٹی نے فنڈزکی واگذاری کو منظوری دی

سرینگر//التواء میں پڑے ترقیاتی پروجیکٹوں کی فنڈنگ کو منظوری دینے اور انہیں وقت مقررہ کے اندر پایہ ٔ تکمیل تک پہنچانے کیلئے اعلیٰ اختیاری کمیٹی کی دوسری میٹنگ پرنسپل سیکرٹری خزانہ نوین کمار چودھری کی صدارت میں منعقد ہوئی۔پرنسپل سیکرٹری خزانہ جو کہ مذکورہ کمیٹی کے چئیرمین بھی ہیں، نے کہا کہ میٹنگ میں صحت عامہ، سیاحت، تعمیرات عامہ، صحت اور صنعت و حرفت محکموں کے315 پروجیکٹوں کی فنڈنگ کے لئے815 کروڑ روپے کی فنڈنگ کو منظوری دی گئی۔میٹنگ میں پرنسپل سیکرٹڑی منصوبہ بندی و ترقی روہت کنسل، پرنسپل سیکرٹری صنعت و حرفت شلیندر کمار، کمشنر سیکرٹری تعمیرات عامہ خورشید احمد شاہ، سیکرٹری صحت عامہ فاروق احمد شاہ، سیکرٹری سیاحت ریگزن سیمفل اور دیگر کئی افسران اور انجنئیر صاحبان موجود تھے۔نوین چودھری نے کہا کہ منظور کئے گئے پروجیکٹوں کو جموں وکشمیر انفراسٹرکچر ڈیولپمنٹ فائنانس کارپوریشن لمٹیڈ کی وساطت سے مقررہ معیاد کے اندر مکمل کرنے کے لئے رقومات فراہم کی جائیں گی۔کمیٹی میٹنگ میں کہا گیا کہ ریاست بھر میں221 واٹر سپلائی سکیموں کی تعمیر کے لئے459 کروڑ روپے منظور کئے گئے ہیں جن کو ایک سال کے اندر مکمل کیاجائے گا۔محکمہ صحت عامہ کی باقی150 سکیموں کو دیگر میٹنگوں کے دوران زیر بحث لایا جائے گا۔کمیٹی نے تعمیرات عامہ کے التواء میں پڑے9 پروجیکٹوں کو بھی منظور کیا جن کی تکمیل کے لئے19.60 کروڑ روپے درکار ہیں۔اس کے علاوہ کمیٹی نے مبارک منڈی پروجیکٹ کے مختلف ترقیاتی کاموں کے لئے65.38 کروڑ روپے منظور کئے ہیں۔کمیٹی نے صحت و طبی تعلیم محکمہ کے48 پروجیکٹوں کو90.53 کروڑ روپے کے لئے منظور کیا۔ اس کے علاوہ کمیٹی نے صنعت وحرفت محکمہ کے31 پروجیکٹوں کو بھی منظوری دی جن کے لئے178.61 کروڑ روپے درکار ہیں۔یہ بات قابل ذکر ہے کہ اپنی دو میٹنگوں کے دوران اعلیٰ اختیاری کمیٹی نے1286 کروڑ روپے کے556 پروجیکٹوں کو منظوری دی ہے۔پرنسپل سیکرٹری خزانہ نے کہا کہ اعلیٰ اختیاری کمیٹی کی میٹنگ متواتر بنیادوں پر منعقد کی جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ کمیٹی کی تیسری میٹنگ22 اکتوبر2018 کو منعقد ہوگی۔
 
 
 

کے سی سی آئی کا وفد بی بی وِیاس سے ملاقی

سری نگر//کشمیر چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹریز ( کے سی سی آئی ) کا ایک وفد یہاں گورنر کے مشیر بی بی وِیاس سے ملاقی ہوا۔وفد نے ریاست میں صنعت و حرفت کے کلہم منظرنامے پر روشنی ڈالتے ہوئے مشیر موصوف کو اپنے درپیش کئی مسائل سے آگاہ کیا۔ وفد کے ساتھ بات چیت کرتے ہوئے مشیر موصوف نے یقین دلایا کہ وہ کے سی سی آئی کے مطالبات پر غور کریں گے۔
 
 

ریاستی گورنرسیاسی بیان بازی سے احتراز کریں:وکیل

سرینگر// بچاؤ تحریک کے صدر اور سابق وزیر عبدالغنی وکیل نے ریاست کے گورنر ستیہ پال ملک کے سیاسی بیانات جاری کرنے پرتعجب اور حیرانگی کا اظہار کیا ہے اور کہا ہے اس حساس ریاست میں گورنر سیاسی بیانات دینے سے احتراز اور گریز کریں۔انہوں نے کہاکہ گورنر کا سیاسی معاملات میں الجھنے سے وادی میں حالات سدھر نے کے بجائے اور ابتر ہو سکتے ہیں۔گورنر ہر وقت اور خاص کر موجودہ حالات میںسیاسی لیڈروں کو اکٹھے کرنے کا ذریعہ ہے۔اگر گورنر نے سیاسی طرفداری شروع کی ایک تو گورنر آفس کا تقدس ختم ہوگا اور دوسرا مختلف جماعتوں کے لیڈران ان سے نزدیک ہونے کے بجائے دور ہوتے جائیں گے۔ جسے ریاست میں انتشار سی کیفیت پیدا ہوگی جو ملک اور ریاست کے مفاد میں نہیں ہوگا ۔عبدالغنی وکیل نے کہا  بیشک ماضی میں دلی سرکار نے کافی ایسی غلطیاں کیں جس سے ریاست کے عوام قومی دھارے سے دور ہوتے گئے ۔ انہوں نے گورنرملک سے پوچھا کیا آج مرکز میں موجودہ  بی۔جے۔ پی سرکار اور ریاست میں گورنر راج وہی پالیسی نہیں تو کر رہی ہے جسے عوام قومی دھارے کے نزدیک آنے کے بجائے  دور ہوتے جارہے ہیں جس کی مثال فرضی بلدیاتی انتخابات کرانا ہے ۔ اس طرح موجودہ مرکزی سرکار ایسی ہی غلطیوں کی مرتکب ہو رہی ہے جو ماضی میں ہوئی ہے۔ماضی میں تقریباًدو دہائیوں تک فرضی انتخابات کئے گئے ۔ریاست کی لیڈر شپ شیخ عبداللہ ،بخشی غلام محمد اور یہاں تک کہ فاروق عبداللہ کو بھی مختلف موقعوں پر خجالت سے دوچار ہونا پڑا ہے ۔ عبدالغنی وکیل نے اس بات پر تعجب کا اظہار کیا ہے کہ گورنر صاحب نے انتخاب سے پہلے ہی سرینگر سٹی کے میئر کا اعلان کرکے جمہوریت کی دھجیاں اڑا دی اور اس طرح موجودہ  بلدیاتی انتخاب کو بہت بڑا فراڈ دھوکہ اور مذاق ثابت کر دیا ہے۔ عبدالغی وکیل نے گورنر صاحب سے اپیل کی کہ وہ اپنے عہدہ کا تقدس ختم نہ کریں بلکہ ایسے بیانات سے احتراز کریں جسے ریاست میں ایک انتشار ی کیفیت پیدا ہوگی  جسے ریاست کے عوام قومی دھارے سے اتنے دور ہو سکیں کہ واپس آنا محال ہوگا ۔
 
 

ملازمین کی بائیو میٹرک حاضری یقینی بنائی جائےـ

آئی ٹی ڈیپارٹمنٹ 
 
سری نگر//گورنر انتظامیہ نے تمام محکموں میں ملازمین کی بائیو میٹرک حاضری یقینی بنانے کے احکامات جاری کئے ہیں۔انفارمیشن ٹیکنالوجی محکمہ کی جانب سے جاری سرکیولر میں کہا گیا ہے کہ بائیو میٹرک حاضری روزانہ بنیادوں پر گورنر سیکرٹریٹ کو بھیجی جاتی ہے۔ سرکیولر میں تمام اِنتظامی سیکرٹریوں سے کہا گیا ہے کہ وہ اس سلسلے میں نوڈل افسروں کو متحرک رہنے کے احکامات دیں۔ ���
 
 

سبکدوش ملازمین6ماہ کی تنخواہوں سے محروم

ترال/سید اعجاز /مختلف سرکاری محکموںسے سبکدوش ہوئے ملازمین 6ماہ کی تنخواہوں اوردیگر واجب الاد رقومات سے محروم ہیں جس کی وجہ سے  مذکورہ ملازمین طرح طرح کے مشکلات سے دو چار ہیں ۔ سبگدوش ہوئے ان ملازمین پر مشتمل ایک وفد نے بتایا کہ 6ماہ قبل وہ نوکریوں سے سبکدوش ہوئے ہیں اور آج تک وہ پنشن حاصل نہیں کرپارہے ہیں۔
 
 

مرکزی  ڈاک گھر کپوارہ اب بمہامہ کے بجائے ریگی پورہ میں کھلا رہے گے 

اشرف چراغ 
کپوارہ //کپوارہ کے ڈاک گھر کو  انٹرنیٹ سہولیات سے جوڑکربمہامہ سے ریگی پورہ منتقل کیا گیا۔محکمہ نے عام لوگوں کو مطلع کیا ہے کہ وہ اب ڈاک سہولیات  ریگی پورہ میں قائم ڈاک گھر سے حاصل کریں۔ قابل ذکر ہے کہ دو برس قبل بھاری برف باری کی وجہ سے کپوارہ قصبہ میں ایک نجی عمارت میں قائم ڈاک گھر کو نقصان پہنچاتھا اور اس کی عمارت غیر محفوظ بن گئی تھی۔ اُس وقت جگہ کی عدم دستیابی کی وجہ سے ڈاک گھر کو عارضی طور بمہامہ میںمنتقل کیا گیا لیکن وہاں پر براڈ بینڈ کی عدم دستیابی کی وجہ آن لائن کام کاج متاثر نہیں ہورہا تھا جس کے نتیجے میں گاہکوں کو سخت مشکلات کا سامنا کرنا پڑتاتھا۔محکمہ کے اعلیٰ حکام نے لوگوں کی مشکلات کو مد نظر رکھتے ہوئے مذکورہ ڈاک گھر کو ریگی پورہ تبدیل کر کے انٹرنیٹ سہولیات سے جوڑ دیا تاکہ لوگوں کا کام آن لائن بھی ہوسکے۔
 
 

گورنر کے شکایتی سیل میں12 اکتوبر کوعوامی دربار ہوگا 

سرینگر //گورنر کے مشیر خورشید احمد گنائی 12  اکتوبر کو صبح ساڑھے دس بجے سے جے کے گورنرس گریونس سیل چرچ لین سرینگر میں عوامی وفود سے ملاقات کیلئے دستیاب رہیں گے ۔ 
 

کرگل میں ضلع سطح کا دو روزہ حسینی مشاعرہ شروع 

کرگل//لداخ پہاڑی ترقیاتی کونسل کرگل کے چیف ایگزیکٹو کونسلر فیروز احمد خان نے روایات ، تہذیب و تمدن کو تحفظ فراہم کرنے اور مزید فروغ دینے کیلئے طویل مدتی منصوبے ترتیب دینے پر زور دیا ہے ۔ انہوں نے یہ بات دو روزہ حسینی مشاعرے کی افتتاحی رسم پر کہی جس کا انعقاد ریاستی کلچرل اکیڈمی کی کرگل شاخ نے کیا ہے ۔ کلچرل اکیڈمی کی کوششوں کی سراہنا کرتے ہوئے فیروز احمد خان نے مشاعروں میں حصہ لینے کیلئے شاعروں کی تعریف کی ۔ انہوں نے کلچرل اکیڈمی کے افسروں پر زور دیا کہ وہ ایسے پروگراموں میں نوجوانوں کی شرکت کو یقینی بنائیں تا کہ وہ ادب کی اہمیت کو سمجھ سکیں ۔ فیروز احمد خان نے کہا کہ تہذیب و تمدن کسی بھی قوم کی شناخت ہوتی ہے لہذا اس کو قدیم روایات کے ساتھ ساتھ تحفظ فراہم کیا جانا چاہئے ۔ انہوں نے ادب کو فروغ دینے کیلئے پہاڑی ترقیاتی کونسل کی جانب سے مکمل تعاون کا یقین دلایا ۔ اس سے قبل عبدالحمید تنویر ، غلام احمد خان جاون ، سید ہادی شاہ آغا ، حاجی محمد ابراہیم راہی ، بشیر احمد وفا ، اکبر علی خان شاہین ، محمد اصغر اسوی ، نثار حسین ترسپون ، محمد جواد جالب ، فدا حسین وزیر فدا ، محمد علی بابا اور فدا علی فدا کرکتی نے حسینی مشاعرے میں اپنا کلام پیش کیا ۔ اس موقعہ پر پہاڑی ترقیاتی کونسل ، کلچرل اکیڈمی کے عہدیدار اور دیگر کئی معزز شخصیات موجود تھیں ۔
 

کرگل میں دیہی ترقی محکمے کا خواتین کیلئے جانکاری کیمپ

کرگل//دیہی ترقی محکمے کے اپلائیڈ نیوٹریشن پروگرام ونگ نے کرگل ضلع میں خواتین کی صحت سے متعلق دو روزہ جانکاری کیمپ کا انعقاد کیا ۔ سٹیٹ نیوٹریشن افسر طفیل احمد راٹھور اس موقعہ پر مہمانِ خصوصی تھے جبکہ بی ڈی اوز ، آئی ای سی کنسلٹینٹ اعجاز احمد خان اور خواتین کی ایک بڑی تعداد اس موقعہ پر موجود تھی ۔نشود و نما کے ماہرین نے اس موقعہ پر خواتین کو مقوی غذا کی اہمیت کے بارے میں روشناس کیا ۔ خواتین کو بتایا گیا کہ وہ حمل کے دوران بالخصوص اپنی خوراک اور صحت کا خاص خیال رکھیں ۔  مقررین نے اس موقعہ پر کہا کہ حکومت بالعموم اور محکمہ دیہی ترقی بالخصوص عورتوں کی بہبودی کیلئے کئی سکیمیں چلا رہی ہے ۔ جن کی بدولت ہزاروں خواتین مستفید ہو رہی ہیں ۔ ان سکیموں کا مقصد خواتین کو بااختیار بنانا اور خود انحصاری پیدا کرنا ہے ۔ 
 
 

گاندربل میں ضلع سطح کی ٹاسک فورس کمیٹی کی پہلی میٹنگ

گاندربل// ضلع ترقیاتی کمشنر گاندربل ڈاکٹر پیوش سنگلا کی ہدایت پر کھادی اینڈ ولیج انڈسٹریز بورڈ گاندربل نے دیہی روزگار پروگرام کی عمل آوری کی مناسبت سے ضلع سطح کی ٹاسک فورس کمیٹی کی پہلی میٹنگ منعقد کی۔اے ڈی ڈی سی این اے بابا نے میٹنگ کی صدارت کی۔کھادی اینڈ ولیج انڈسٹریز بورڈ کی طرف سے پروگرام پر عملد رآمد کیا جائے گا۔8ممبران پر مشتمل تشکیل دی گئی ٹاسک فورس کمیٹی نے نئے انٹرپرنیورس کاانٹرویو لیا۔آر ای جی پی دراصل ایک نیا سبسڈی پروگرام ہے جس کے تحت وادی میںد ستکاروں اور ورکروں کی بہتر آمدنی کے لئے دیہی روزگار کے تحت معاونت فراہم کی جارہی ہے تاکہ وہ اپنے خود روزگاریونٹ قائم کرسکیں۔میٹنگ میں لیڈ ڈسٹرک منیجراور ڈسٹرک افسر جے اینڈ کے کھادی ولیج انڈسٹریز بورڈ کے علاوہ دیگر متعلقہ افسران بھی موجود تھے۔یہ امر قابل ذکر ہے کہ اس سکیم کے تحت ضلع گاندربل سے اب تک بیروزگار نوجوانوں کی 200درخواستیں موصول ہوئی ہیں۔
 

ویٹر نری ڈاکٹروں کا وفد ڈاکٹر سامون سے ملاقی، مسائل کا حل طلب کیا 

سرینگر //جموں و کشمیر ویٹر نری ڈاکٹرز ایسوسی ایشن ( کشمیر ) کے ایک وفد نے پرنسپل سیکرٹری انیمل و شیپ ہسبنڈری ڈاکٹر اصغر حسن سامون کے ساتھ ملاقات کر کے ملازمت سے متعلق مسائل کا حل طلب کیا ۔ ایسوسی ایشن کے صدر پرویز احمد کی سربراہی میں وفد نے ٹایم باؤنڈ پرموشن کا مطالبہ کرتے ہوئے مختلف جگہوں پر ویٹر نری ڈاکٹروں کی تعیناتی کا معاملہ بھی اٹھایا ۔ وفد نے خالی پڑی اسامیوں کو پُر کرنے کی بھی مانگ کی ۔ ڈاکٹر سامون نے وفد کو یقین دلایا کہ اُن کے جائیز مطالبات کو مرحلہ وار بنیادوں پر پورا کیا جائے گا ۔ انہوں نے انیمل و شیپ ہسبنڈری محکمے کو مزید فروغ دینے کیلئے ویٹر نری ڈاکٹروں کا تعاون طلب کیا ۔ 

 

خوش نویسی اور کاغذسازی

۔15نومبر سے5روزہ ورکشاپ

سرینگر//نوجوان نسل کو ریاست کی بیش قیمت ثقافت اور تہذیب کی جانکاری دینے کیلئے آرکائیوز اینڈ آرکیالوجی محکمہ نے کئی سرگرمیوں کے شیڈول کا اعلان کیا ہے ۔ محکمہ کے ڈائریکٹر منیر السلام نے کہا کہ وادی کشمیر ثقافت ، تمدن اور تہذیب کے لحاظ سے ایک الگ شناخت رکھتی ہے اور اس کو تحفظ فراہم کرنے کیلئے نئی نسل کو جانکاری دینا وقت کی اہم ضرورت ہے ۔ انہوں نے کہا کہ محکمہ اندرا گاندھی نیشنل سنٹر فار آرٹس نئی دہلی اور انٹیک کے اشتراک سے پیپر کنزرویشن پر ایک ورکشاپ منعقد کرے گا ۔ منیر الا سلام نے کہا کہ ورکشاپ کے انعقاد کا مقصد متعلقین کو قدیم روایات کے بارے میں جانکاری دینا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ اس ورکشاپ میں سرکاری محکمے اور نجی ادارے حصہ لے سکتے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ خوش نویسی اور کاغذ سازی کے موضوع پر 15 نومبر سے پانچ روزہ ورکشاپ منعقد ہو گا جس میں کرناٹک سے تعلق رکھنے والے معروف خطاط محمد ادریس قرطاس شرکت کریں گے ۔ محکمہ ہیری ٹیج اور آرٹ فوٹو گرافی کے موضوع پر ایف ٹی آئی آئی پونے کے اشتراک سے دس روزہ ورکشاپ منعقد کرا رہا ہے ۔ منیر السلام نے مزید کہا کہ محکمہ باصلاحیت نوجوانوں کیلئے ایک پلیٹ فارم مہیاء کرنے کی سمت میں کام کر رہا ہے ۔
 

نئی دلی میں موسمیاتی تبدیلی سے متعلق قومی ورکشاپ

پرنسپل چیف کنسرویٹر جنگلات نے ریاست کی نمائندگی کی

نئی دلی//پرنسپل چیف کنزرویٹر آف فارسٹس ( پی سی سی ایف) سریش چُگ نے ریاست کی طرف سے تشکیل دی گئی ایک ڈیلی گیشن کی سربراہی کرتے ہوئے آج یہاں کلائمیٹ سے متعلق قومی ورکشاپ میں ریاست کی نمائندگی کی۔ورکشاپ میں تمام ریاستوں کے این اے ایف سی سی کی عمل آوری کے نمائندوں نے شرکت کی۔ورکشاپ میں مرکزی وزارت برائے ماحولیات ، جنگلات اورکلائمیٹ چینج ڈاکٹر ہرش وردھن نے بھی شرکت کی۔پی سی سی ایف نے ریاست میں کلائمیٹ چینج کے اثرات سے نمٹنے کے لئے ریاستی حکومت کی طرف سے کئے جارہے اقدامات کی تفاصیل پیش کیں۔پی سی سی ایف کی ٹیم میں سٹیٹ کواڈینیٹر ، کلائمیٹ چینج سیل محکمہ ماحولیات مجید فاروق نے بحث میں حصہ لیا۔سُریش چُگ نے اس موقعہ پر این اے ایف سی سی کے تحت حاصل شدہ پیش رفت کے بارے میں خدو خال پیش کئے ۔اس موقعہ پر ایگریکلچر پروڈکشن محکمہ کو رقومات کو خرچ کرنے میں تیز ی لانے پر زور دیا گیا تاکہ پروجیکٹ   کے بہتر نتائج حاصل کئے جاسکیں۔نبارڈ کو بھی پروجیکٹ کے لئے وقت پر رقومات فراہم کرنے کے لئے کہا گیا۔
 
 

بچیوں کا بین الاقوامی دِن 

 گورنر نے نگہداشت پر زور دیا

سرینگر//گورنر ستیہ پال ملک نے بچیوں کے بین الاقوامی دِن پر ریاست کے عوام کو مبارک باد دی ہے۔اپنے ایک پیغام میں گورنر نے لوگوں سے اپیل کی ہے کہ وہ لڑکیوں اور خواتین کے ساتھ امتیازی سلوک روا رکھنے کے خلاف بین الاقوامی کوششوں میں اپنا رول ادا کریں۔اُنہوں نے بچیوں کو تعلیم ، مقوی غذا ،آئینی حقوق ، طبی نگہداشت اور تشدد سے حفاظت فراہم کرنے پر زور دیا ہے۔گورنر نے کہا ہے کہ’ ہمیں جنسی تفاوت کے خلاف کام کرنا چاہئے اور بچیوں کو بااختیار بنانے کے لئے مناسب اقدامات کئے جانے چاہئیں‘۔
 

ڈی سی گاندربل نے نالہ سندھ کا معائنہ کیا

کنگن/ارشاد احمد/ضلع ترقیاتی کمشنر گاندربل پیوش شنگلا کی ہدایت پر ایس ڈی ایم کنگن معراج الدین شاہ نے کنگن سے ملحقہ علاقہ باغ پتی سرفراو کا دورہ کیا جہاں انہوں نے صورتحال کا جائزہ لیا۔ان کے ہمراہ تحصیلدار گنڈ، محکمہ ارگیشن اورفلڈکنٹرول کے افسران بھی تھے تاہم معائنہ کے دوران کسی قسم کا تعمیراتی کام نہیں پایا گیا۔ اس موقع پر تحصیلدار گنڈ اور محکمہ ارگیشن اور فلڈکنٹرول حکام کو سختی سے ہائی کورٹ احکامات پر عملدرآمد کرنے پر زور دیا گیا ۔
 
 

ترال میں نوجوان ریچھ کے حملے میں زخمی

سید اعجا ز 
 
ترال//ترال میں ایک نوجوان پر ریچھ نے حملہ کر کے بری طرح زخمی کر دیا ہے۔ مقامی لوگوں نے زخمی نوجوان کو فوری طورپراسپتال منتقل کیا ہے ۔ قصبہ ترال سے 8کلومیٹر دورمندورہ نامی گائوں میں ایک ریچھ نے بدھ کو بعد دوپہر ایک18سالہ نوجوان رفیق احمد خان ولد عبدالاحد خان کو اپنے گھر کے نزدیک حملے میںزخمی کر دیا ہے ۔مذکورہ نوجوان پہلے ہیلتھ سنٹر لرو جاگیراور بعد میںایس ڈی ایچ ترال منتقل کیا۔
 

قیدیوں کی زندگیاں اجیرن :لیگ

سرینگر//مسلم لیگ نے محبوسین کو طبی سہولیات میسر نہ رکھنے ، پیش عدالت نہ کرنے اور اسیری کو طول دینے کیلئے بے بنیادکیسوں میں پھنسانے کو بدترین سیاسی انتقام گیری قرار دیتے ہوئے اس کی مذمت کی ہے ۔ لیگ ترجمان نے کہا کہ قیدیوں کے حوالے سے جو خبریں موصول ہورہی ہیں وہ انتہائی افسوسناک ہیں ۔انہوںنے کہا کہ ان محبوسین کا کوئی پرسانِ حال نہیں ہے جس کی وجہ سے ان میں بیشتر افراد کی زندگیاں اجیرن بن چکی ہیں۔انہوں نے مزیدکہاکہ دنیا کے کسی بھی مہذب تاریخ میں کہیں دکھائی نہیں دیتا ہے کہ محض سیاسی بنیادوں پر بشری حقوق کے پرخچے اڑائے گئے ہوں اور لوگوں کے اظہار رائے کے حق کو طاقت کی بنیاد پر غصب کیا جاتا ہو کیونکہ اقوام عالم کے قانون میں انسانی حقوق کی پاسداری اور تحفظ شرط اول ہے۔ترجمان نے لیگ کے ضلعی ذمہ دار مولوی سجاد کی کورٹ بلوال جیل سے رہائی کے بعد دوبارہ گرفتاری کے بعدجے آئی سی میراں صاحب جموں میں پچھلے بیس دنوں سے مقید رکھنے کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ عدالتی احکامات کے باوجود جس طرح مولوی سجاد کو جے آئی سی میں بند رکھا گیا ہے وہ ناانصافی اور انتقام گیری کا جیتا جاگتا ثبوت ہے ۔
 

گرفتاریاں عوام کو مرعوب کرنے کی کوشش:فرنٹ

پارٹی کے زونل صدر اور آرگنائزر گرفتار

 سرینگر//لبریشن فرنٹ نے بلدیاتی و پنچایتی الیکشن کوایک بے سود عمل قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ انتخابی عمل کو کامیاب بنانے کیلئے گرفتاریوں کانیا سلسلہ، شبانہ چھاپے، تھانوں میں بلانے کا عمل اور دوسرے غیر جمہوری اقدامات انتہائی مضحکہ خیزہیں۔ موصولہ بیان میں فرنٹ نے زونل صدر نور محمد کلوال اور زونل آرگنائزر بشیر احمد کشمیری کی پولیس کے ہاتھوں گرفتاریوں کی مذمت کی ہے۔بیان کے مطابق پولیس کی بھاری جمعیت نے نور محمد کلوال کوشبانہ چھاپے کے دوران گرفتار کرلیاجبکہ پولیس کی ایک اور جمعیت نے بدھ کی صبح پارٹی کے زونل آرگنائزر بشیر احمد کشمیری کے گھر پر بھی چھاپہ ڈالا اور انہیں حراست میں لیا۔اس دوران پولیس فرنٹ کے نائب زون صدر محمد یاسین بٹ کو تلاش کرتے پھررہی ہے اور انہیں پولیس تھانہ نگین پر پیش ہونے کا الٹی میٹم دیا گیا ہے۔پارٹی ترجمان نے کہا کہ جمہوریت کے نام پر الیکشن اور ظلم و جبر کے باوجود بھی دہلی کے حکمران اور انکے حمایتی کشمیریوں کو مرعوب کرنے میں ناکام ہوچکے ہیں اور موجودہ بلدیاتی الیکشن میں کشمیریوں کا  بائیکاٹ ان کیلئے چشم کشا ہونا چاہئے۔دریں اثناء ترجمان نے مشتاق احمد خان بٹہ مالو کو اُن کی برسی پر یاد کرتے ہوئے خراج عقیدت ادا کیا ہے۔ بیان کے مطابق مشتاق احمد خان10اکتوبر1990کو جاں بحق ہوئے تھے ۔ 
 

ڈورو منصف کورٹ میں لوک عالت منعقد

عارف بلوچ
 
اننت ناگ // ڈورو منصف کورٹ میں ایک لوک عدالت منصف جج رافیہ حسن خاکی کی صدارت میں منعقد ہوا۔ لوک عدالت میں مختلف نوعیت کے کیس زیر بحث لائے گئے ،جس میں سے5کیس افہام و تفہیم کے زریعے حل کئے گئے۔ لوک عدالت کے ووران وکلاء، تاجرو معزز شہری موجود رہے۔  عوامی سطح پر لوک عدالت کو کافی پذیرائی حاصل ہوئی۔ 
 

جامع مسجد کے سابق امام اور 

نامور شاعرمولوی اسد اللہ دارفوت

سرینگر//جامع مسجد کے سابق امام اور نامور ادیب ،محقق و شاعرمولوی اسد اللہ دار بدھ کو انتقال کرکئے۔ انہوں نے اپنی رہایش گاہ واقع بژہ پورہ الہی باغ میں کل شام آخری سانس لی۔ان کی نماز جنازہ میں بڑی تعداد میں لوگ شریک ہوئے جسکے بعد انہیں آبائی قبرستان نزدیک زیارت بہائو الدین گنج بخش نوہٹہ میں سپر د خاک کیا گیا ۔مولوی اسد اللہ دارنے فارسی ،اردو ،عربی اور کشمیری زبان میں کئی کتابیں لکھی ہیں ۔مولوی اسد اللہ 70کی دہائی میں جامع مسجد سرینگر میں پنج وقتہ نماز کی امامت بھی کرتے رہے جبکہ اس کے علاوہ انہوں نے کئی اہم مساجد میں امامت کے فرایض بھی انجام دئے ہیں ۔ مرحوم کی میرواعظ خاندان سے رشتہ داری تھی اور میر واعظ مولانا عطاء اللہ مرحوم کے پھوپھا تھے  جبکہ وہ میزان پبلیکشنز کے شبیر احمد ماٹجی کے ماموں تھے ۔ان کا چہارم جمعہ کو نماز جمعہ کے بعد اڑھائی بجے آبائی قبرستان میں انجام دیا جائے گا۔