تازہ ترین

جالندھرسٹی انجینئرنگ کالج ہوسٹل پر چھاپہ

۔4کشمیری طالب علم گرفتار،اسلحہ بر آمد کرینکا دعویٰ

11 اکتوبر 2018 (00 : 01 AM)   
(      )

نیوز ڈیسک
سرینگر//جموں وکشمیر پولیس نے دعویٰ کیا ہے کہ پنجاب پولیس کیساتھ ایک مشترکہ کارروائی عمل میں لائی گئی جس دوران عسکری تنظیم ’انصار غزوۃ الہند‘اور ’جیش محمد ‘سے رابط رکھنے کی پاداش میں 4طالب علموں کو ہتھیار اور گولی بارود سمیت جالندھر پنجاب سے گرفتار کیا گیا ۔جموں وکشمیرپولیس نے پنجاب پولیس کے اشتراک سے بدھ علی الصبح جالندھرکے مضافاتی علاقہ شاہ پور میں واقع ایک نجی انجینئرنگ کالج‘سٹی انسٹی چیوٹ آف انجینئرنگ منیجمنٹ اینڈٹیکنالوجی میں زیرتعلیم ایک کشمیری طالب علم زاہد گلزار ولد گلزار احمد راتھرساکن راجپورہ پلوامہ کے ہوسٹل کمرے میں چھاپہ ڈالا۔بتایاجاتاہے کہ زاہدگلزار،جوکہ یہاں بی ٹیک (سیول) میں سیکنڈسمسٹر کاطالب علم ہے ،کے کمرے کی جب پولیس کی مشترکہ پارٹی نے تلاشی لی تواسوقت کمرے میں مزیدتین کشمیری طالب علم بھی موجودتھے۔ پنجاب پولیس کے سربراہ سریش ارورہ نے ایک بیان میں کہاکہ جموں وکشمیرپولیس اور پنجاب پولیس کے مشترکہ دستے نے تلاشی کے دوران کمرے سے ایک رائفل اورکچھ بارودی موادبھی برآمدکیا۔انہوں نے کہاکہ جموں وکشمیرپولیس نے پنجاب پولیس کے اشترا ک سے یہ کارروائی اس پختہ اطلاع کے بعدعمل میں لائی کہ جالندھرمیں زیرتعلیم کچھ کشمیری طالب علموں کاجنگجوگروپوں ’انصار غزواۃ الہند‘اور ’جیش محمد‘کیساتھ رابطہ ہے ،اوریہ طالب علم ملی ٹنٹ سرگرمیوں میں ملوث ہیں ۔ڈی جی پی سریش ارورہ کامزیدکہناتھاکہ کمرے سے ہتھیاراورگولہ بارودبرآمدہونے کے بعدپولیس کے مشترکہ دستے نے کشمیری طالب علم زاہدگلزار کے علاوہ کمرے میں موجودمحمدادریس شاہ عرف ندیم ساکن پلوامہ،یوسف رفیق بٹ ساکن نورپورہ ترال اورازلان احمدکھوروساکن سوپورکوپوچھ تاچھ کیلئے گرفتارکیاگیا۔انہوںنے کہاکہ گرفتارشدگان کیخلاف ایف آئی آ ر ز یر نمبر 166/2018زیردفعہ121،121-A،120B،25/54/59آرمزایکٹ ،3/4/5ایکسپلیوسیوایکٹ،10/13/17/18،18-B/20/38/39/40یوایل اے کے تحت پولیس تھانہ صدرجالندھرمیں کیس درج کیاگیا۔