تازہ ترین

توسیعی پورگرام کیلئے جے کے بنک نے بھرتی مہم کا اعلان کیا

بنک کی تجارت150000کروڑ نشان سے متجاوز

7 اکتوبر 2018 (00 : 01 AM)   
(      )

تجارتی فروغ کے دوسرے مرحلے کی مہم کیلئے قرضوں کی وافر فراوانی لازم:پرویز احمد 

سرینگر//ریاست کے اہم مالیاتی ادارے جے کے بنک نے آج پروبیشنری افسران اور بینکنگ ایسوسی ایٹس کی اسامیوں کیلئے بھرتی مہم چلانے کا اعلان کیا ہے۔بنک نے یہ مہم ریاست میں تجارت کی مرکزیت کے مد نظر توسیعی پروگرام کو مدد کرنے کیلئے کیا ہے ساتھ ہی ملک کے دیگر حصوں میں بنک کی بزنس کو بڑھانے کیلئے بھی یہ بھرتی مہم چلائی جارہی ہے ۔۔بنک نے پہلے ہی 150000کروڑ تجارتی نشان کو اپر کرلیا ہے۔اس اعلان سے ریاست میں بے روزگارتعلیم یافتہ  نوجوانوں ککافیراحت ملے گی جو ریاست میں روزگارکے محدود مواقع پارہے ہیں ۔جے کے بنک ریاست میں روزگار فراہم کرنے والا ودسرا سب سے بڑا ادارہ ہے۔موجودہ وقت میں جے کے بنک عملے کی قلت محسوس کررہا ہے جو کہ مختلف عہدوں پر ملازمین کی سبکدوشی ۔استعفی اور نئے بزنس یونٹ کھولنے کی وجہ سے درپیش ہے ۔بنک ترجمان نے کہاکہ ان نئے بزنس یونٹوں میں خدمات کی فراہمی کیلئے نئے عملے کی بھی ضرورت ہے۔ترجمان نے مزید کہاکہ بنک کا بورڑریاست بھر میں کیمپس بھرتی کیلئے رہنما ادارہ ہے اسکے علاوہ دیگر اقدامات بھی کئے جاتے ہیں جس سے مستحق اور باصلاحیت نوجوانوں کو شفاف طریقے سے ان اسامیوں پر تعینات کیا جائے۔اس حوالے سے میڈیا کے ساتھ بات کرتے ہوئے چیئرمین و سی ای او جے کے بنک پرویز احمد،جنہوں نے کامیابی کے ساتھ بنک قیادت کے دو برس مکمل کئے ، نے کہاکہ بنک نے کامیابی کے ساتھ تبدیلی کا سفر آگے بڑھایا ہے اور اختیار کی گئی تمام پالیسیوں کی عمل آوری میں شفافیت کو اولیت دی ہے‘‘۔انہوں نے کہاکہ ہمارے بزنس ماڈل میں تبدیلی اور اے اے اے درجہ کارپوریٹ نے بنک کو 150000کروڑ تجارت کا نشان30ستمبر2018تک عبور کرنے میں مدد دی جس میں ریاست جموں وکشمیر کی تجارت105000کروڑ شامل ہے۔چیئرمین نے کہاکہ‘‘ہماری ریاست میں جے کے بنک کا مشن اپنے لوگوں کے معاشی پروفائل کو استوار کرنا ہے جس کہ قرضہ رسائی کو بڑھاوا دینے سے ہی ممکن ہے اور اس کیلئے منافع بخش سیکٹروں میں زیادہ سے زیادہ قرضے واگذار کرنے ہوںگے ۔انہوں نے کہاکہ ہمارا ارادہ یہ ہے کہ ریاست کی مجموعی جیو گرافی میں کسی بھی فرد کو بینکنگ سہولت پانے کیلئے5سے 10کلومیٹر کا سفر نہ کرنا پڑے اس نے نہ صرف جمع اور قرنوں کی رسائی کو بڑھاوا ملے گابلکہ اس سے ریاستی حکومت کے اس تصور کو بھی عمل شکل ملے گی جو ریاست کے لوگوں کی معاشی حیثیت کو بڑھانے سے متعلق ہے۔یہ بات قابل ذکر ہے کہ ریاستی گورنر ستیہ پال ملک کے ساتھ بنک کی حالیہ میٹنگ کے دوران بنک نے یقین دلایا تھا کہ ریاست کی سماجی اقتصادی ترقی میں اہم رول ادا یا جائے گااور اس کیلئے قرضوں کی فراوانی بڑھا کر اور ورزگار کے مواقع پیدا کئے جائیں گے۔چیئئرمین نے مزید کہاکہ ’’بنک نئے35الٹرا سمال برانچ جنہیں جے کے بنک ایزیپے منٹ یونٹس کہا جاتا ہے لیہ میں کھولنے کیلئے تیار ہے جس سے لیہ اور لداخ خطے کے تقریبا111دیہات کو فائدہ ملے گا ۔ان الٹرا سمال برانچ کو قائم کرنے کا مقصد بنک کے اس خیال کو تقویت دینا ہے جو وہ دوردراز خطوں کو مشکل جغرافئیائی حالات کی وجہ سے درپیش مشکلات سے نجات دلانے کے حوالے سے رکھتا ہے ۔بنک اسی طرح کے ماڈل کو ریاست کے دوردراز علاقوں تک بھی توسیع دینے کا ارادہ رکھتا ہے ۔چیئرمین نے مزید کہا کہ چونکہ آپ سبھی کو معلوم ہے کہ ہم اپنی 80وں ویم تاسیس منانے کے مرحلے میں ہیں،ایسے میں ہمیں اپنے صارفین تک مزید بہتر طریقے سے پہنچنا ہوگا تاکہ ہماری رسائی زیادہ سے زیادہ عا م ہو اور لوگ ہم سے جڑ جائیں