تازہ ترین

جوینائل جسٹس ترمیمی بل لوک سبھا میں پیش

7 اگست 2018 (00 : 01 AM)   
(      )

نئی دہلی//یتیم بچوں کے گود لینے سے متعلق حکم جاری کرنے کا حق عدالتوں کی جگہ ضلع مجسٹریٹوں کو دینے کے التزام والا جوینائل جسٹس (بچوں کی دیکھ بھال اور حفاظت) ترمیمی بل 2018 آج لوک سبھا میں پیش کیا گیا۔ خواتین اور بچوں کی ترقی کے وزیر مینکا گاندھی نے پارلیمنٹ میں یہ بل پیش کیا۔ بل کو پیش کرنے کی وجوہات کے سلسلے میں بتایا گیا کہ یتیم بچوں کے گود لینے کاحکم جاری کرنے کا حق صرف عدالتوں کے پاس ہونے کی وجہ سے اس میں تاخیر ہوتی ہے کیونکہ عدالتوں پر کام کا بوجھ کافی ہوتا ہے ۔ رواں سال 20 جولائی کو ایسے 629 معاملے مختلف عدالتوں کے پاس ہیں۔ حکم جاری ہونے میں تاخیر کی وجہ سے یتیم بچوں کو خاندان مل جانے کے باوجودبھی بچوں کے گھر میں انتظار کرنا پڑتا ہے ۔ اس معاملے کو حل کرنے کے لئے بل ضلع مجسٹڑیٹ کو یہ حق دیتا ہے کہ وہ بچوں کے گود لینے سے متعلق حکم جاری کرسکتے ہیں۔ ساتھ ہی پرانے سبھی معاملے جو عدالتوں کے پاس لمبے عرصے سے زیر التوا ہیں انہیں متعلقہ ضلع مجسٹریٹوں کو حوالے کرنے کا التزام بھی بل میں رکھا گیا ہے ۔یو این آئی